سندھ کے پہلے نجی اسپتال میں جگر کی کامیاب پیوندکاری جاری

ضیاء الدین اسپتال کراچی میں جگر کی 10ویں کامیاب پیوند کاری
Jul 03, 2022

کراچی کا ڈاکٹر ضیاء الدین اسپتال سندھ میں جگر کی پیوند کاری کرنیوالا پہلا ادارہ بن گیا۔ ڈاکٹر ضیاء الدین اسپتال نے اس بات کو یقینی بنایا ہے کہ پاکستان میں جگر کی پیوند کاری کیلئے قابل بھروسہ اور اعلیٰ معیار کے علاج تک رسائی حاصل ہو۔

اسپتال کی جانب سے جاری اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ ڈاکٹر ضیاء الدین اسپتال صحت کی سہولیات فراہم کرنیوالا سندھ کا پہلا جبکہ پاکستان کا چوتھا نجی ادارہ ہے، جہاں جگر کی پیوند کاری کا آغاز کیا جاچکا ہے، آج ہمیں ضیاء الدین اسپتال میں جگر کی 10 کامیاب پیوند کاری کی تکمیل کا اعلان کرتے ہوئے خوشی ہورہی ہے۔ اس سنگ میل کو عبور کرنا یقیناً آسان نہیں تھا مگر ہماری ٹیم نے یہ کام انتہائی قلیل مدت میں کر دکھایا ہے۔

ڈاکٹر ضیاء الدین اسپتال کے چیئرمین ڈاکٹر عاصم حسین نے جگر کی 10 کامیاب پیوند کاری کے موقع پر تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جگر کی پیوند کاری ملک اور عوام کی ضرورت ہے، کامیابی پیوند کاری ضیاء الدین اسپتال کی بڑی کامیابی ہے، یہ ایک ماہر ٹیم کے بغیر ممکن نہیں تھا، جگر کی پیوند کاری کیلئے ہماری ٹیم نے جس لگن اور محنت سے کام کیا ہے وہ یقینا مبارکباد کے مستحق ہیں۔

اس موقع پر ماہر امراض جگر ڈاکٹر ضیغم عباس کا کہنا تھا کہ پاکستان میں جگر کی بیماری ایک بڑا مسئلہ ہے، ہیپاٹائٹس سی اور بی وائرس کے انفیکشن جگر کی خرابی کی سب سے عام وجوہات ہیں، ہر 15 منٹ میں ایک شخص ہیپاٹائٹس بی اور سی کی پیچیدگیوں کے باعث اپنی جان گنوا بیٹھتا ہے، 20 لاکھ سے زیادہ افراد کو ان مسائل کی وجہ سے زندہ رہنے کیلئے جگر کی پیوند کاری کی ضرورت پڑسکتی ہے۔

ڈاکٹر ضیغم عباس نے مزید کہا کہ اس سال گمبٹ انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز اور سندھ حکومت کے تعاون سے ڈاکٹر ضیاء الدین اسپتال نے جگر کی پیوند کاری کا آغاز کیا، یہ پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کی ایک قابل ذکر مثال ہے، جہاں حکومت سندھ فعال طور پر لوگوں کی صحت کیلئے سرمایہ کاری کررہی ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ جگر کی پیوند کاری ایک ایسا طریقۂ کار ہے جس میں ایک زندہ عطیہ دہندہ کے صحتمند جگر کے حصے کا استعمال کیا جاتا ہے جو ایک قریبی خاندانی فرد سے حاصل کیا جاتا ہے، عطیہ کردہ صحتمند جگر کو ناکارہ یا درست طریقے سے کام نہ کرنیوالے جگر کی خرابی کو دور کرنے کیلئے استعمال کیا جاتا ہے۔

اس موقع پر لیور ٹرانسپلانٹ ڈپارٹمنٹ کی ٹیم میں شامل سربراہ ڈاکٹر عبدالوہاب ڈوگر، ڈاکٹر ذیشان حیدر، ڈاکٹر علی قدیر سمیت ضیاء الدین اسپتال کے میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ڈاکٹر انوپ داوانی اور دیگر نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کیا۔

کراچی

HEALTH

Ziauddin Hospital

Liver Transplant

Tabool ads will show in this div