ظہیر عباس کی طبیعت میں بہتری کے بعد وینٹی لیٹر ہٹادیا گیا

فیملی کی مکمل صحت یابی کیلئے مداحوں سے دعاؤں کی اپیل

ایشین بریڈ مین اور پاکستان کے لیجنڈ کرکٹر ظہیر عباس کی طبیعت میں بہتری آنا شروع ہوگئی جس کے بعد انکا وینٹی لیٹر ہٹا دیا گیا ہے۔

ظہیر عباس 21 جون سے لندن کے سینٹ میری اسپتال میں زیر علاج ہیں، انکی فیملی نے ظہیر عباس کی مکمل صحتیابی کیلئے فینز سے دعاؤں کی اپیل کی ہے۔

ظہیرعباس کے فیملی ذرائع کے مطابق انکی طبیعت میں بہتری کے بعد اب وہ بغیر کسی مشین کے سہارے نارمل سانس لے رہے ہیں تاہم اب بھی وہ انتہائی نگہداشت وارڈ میں موجود رہیں گے، جبکہ انہیں اب ایک دو روز میں دوسرے ہسپتال منتقل کیا جائے گا۔

ظہیر عباس کے اہل خانہ کے مطابق ظہیرعباس کو کچھ دن پہلے نمونیہ کی شکایت پر اسپتال داخل کیا گیا تھا، تاہم ان طبیعت بگڑنے کے باعث انہیں انتہائی نگہداشت وارڈ میں شفٹ کردیا گیا تھا۔

ڈاکٹرز کی جانب سے ظہيرعباس سے کسی کو ملنے کی اجازت نہیں ہے اور صرف ان کے اہل خانہ ہی ان کے ساتھ رہ سکتے ہیں۔

سابق ٹیسٹ کرکٹر ظہیر عباس دبئی میں کورونا کا شکار ہوئے تھے، انہوں نے احتیاطی تدابیر پر عمل کرتے ہوئے کورونا کو مات دی اور لندن روانہ ہوگئے، تاہم وہ جیسے ہی لندن پہنچے تو انہیں کڈنی میں درد کی شکایت ہوگئی۔

ظہیر عباس کو درد کی وجہ سے اسپتال لے جایا گیا، جہاں ان کے مختلف ٹیسٹ کئے گئے اور انکشاف ہوا کہ ان کے پھیپھڑوں میں مسئلہ ہے اور انہیں اسی وجہ سے ہی اسپتال میں رکھا گیا۔

کرکٹ

zaheer abbas

Tabool ads will show in this div