“سوری’’، پاکستانی فلم انڈسٹری کے تنازعات کا شکار فلم

فلم کی ختم کرنے کا اعلان معروف اداکار فیصل قریشی اور فلم سوری کے ہدایت کارسہیل جاوید نے ویڈیو کے ذریعے کیا۔

تنازعات، عالمی وبا، فئنانس کے مسائل سمیت فلم کے خلاف ہونے والی خبروں سے بلاخر تنگ آکر فلم کے پروڈیوسر اور فلم میں مرکزی کردار نبھانے والے اداکار فیصل قریشی نے فلم ’’سوری“ سے معذرت کر لی۔

فلم کے ہدایت کار اور معروف ویڈیو ڈائیکریکٹرسہیل جاوید نے سما ڈیجیٹل سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ فلم مکمل نہ ہونے کی بہت سی وجوہات بنیں ۔ یہ فلم انکا دیرینہ خواب تھا جسے وہ تکمیل تک پہنچانا چاہتے تھے۔

فلم کی کاسٹ بھی تذبذب کا شکار

فلم کے ہدایت کار سہیل جاوید نے کہا کہ فلم کے مرکزی کردار ادا کرنے والے فنکارزاہد احمد کو ان کی فلم میں پروفارم کرنے سے منع کیا اور فون کرکے دھمکایا جارہا ہے کہ وہ یہ فلم نہ کریں۔

سہیل جاوید نے کہا کہ شوٹ کے پہلے یا دوسرے دن جب عدنان صدیقی کا اسپیل چل رہا تھا تو زاہد احمد نے کہا کہ کہ انہیں اس فلم کو کرنے سے منع کیا جارہا ہے ۔ وہ فلم کے بارے میں تذبذب کا شکار ہیں لیکن بالآخر فلم میں کام کیا۔

فلم سوری میں سب سے پہلے اداکاہ سونیا حسین کو کاسٹ کیا گیا ،جس کے بعد فریال محمود کو سونیا کو ہی دیا گیا رول آفر کیا گیا۔

فلم کے ہدایت کار کہتے ہیں کہ فریال محمود نے اپنا کردار بہت خوبصورتی سے نبھایا تاہم فلم کی شوٹنگ کے دوسرے مرحلے فریال محمود اورآمنہ شیخ نے اپنی ذاتی وجوہات کی بنا پر معذرت کرلی۔

اس فلم کو 2019 یعنی چار سال قبل عکسبند کیا گیا۔ اب فیصل قریشی کے وہی خدوخال نہیں رہے۔

سہیل جاوید کا الزام

فلم میکر سہیل جاوید کا کہنا تھا کہ فلم کے اعلان کے آغاز سے ہی ان کے خلاف محاذ شروع کر دیا گیا۔ اس میں کوئی اور نہیں بلکہ پاکستان کے ہی فلم میکر جامی محمود ملوث ہیں۔

انہوں نے الزام عائد کیا کہ فلم اورمیرے خلاف سوشل میڈیا پر باتیں کی، فلم کے خلاف باقاعدہ مہم چلائی گئی۔ عدالت میں فلم میکر جامی محمود کے خلاف ہتک عزت کا مقدمہ دائر ہے۔

فلم کی شوٹ 45 فی صد تک مکمل

16 دن کی شب و روز محنت کی بدولت فلم کی شوٹنگ 2019 میں تقریبا پنتالیس فی صد مکمل کرلی گئی تھی۔ جس کے بعد فلم کو مکمل کرنا بے حد مشکل ثابت ہوا، فلم 4 سال بعد بھی مکمل نہ ہوسکی۔ فلم میں شامل 7 میں سے 2 گانے مکمل طور پر شوٹ ہو گئے تھے۔

لوگوں کا بھرپور تعاون

سہیل جاوید نے کہا کہ ایسا نہیں کہ فلم بنانے میں مشکلات کا ہی سامنا کرنا پڑا یا کسی تنازعات کا ہی شکار رہے ۔ بلکہ اس فلم کے لئے بہت سے لوگوں نے بے حد تعاون کیا ، جسے پاکستانی فلم میکر اسد الحق نے بھرپور ساتھ دیتے ہوئے تکینکی معاونت فراہم کرتے رہے ۔ بہت سے ایسے لوگوں نے بھی تعاون کیا کہ جن کو میں جانتا تک نہیں تھا۔

فلم کے فرسٹ اینڈ لاسٹ لُک پر تاثرات

فلم کو ختم کرنے کے اعلان کرتے ہوئے فیصل قریشی کا کہنا تھا کہ کچھ لوگوں نے ایسی حرکتیں کیں، باتیں کیں اور پھر کوویڈ کے اس فلم کو مکمل کرنا مشکل ہو گیا ۔

فلم کو ختم کرنے کے اعلان کے دوسرے دن ہی اداکار فیصل قریشی نے فلم سوری کے فرسٹ اینڈ لاسٹ لُک کو سماجی رابطوں کی ویب سائٹس پر اپنے اکاونٹ کے ذریعے شوکیس کیا۔

شوبز کے کچھ ستاروں نے بھی فلم کے لُک کو پسند کیا۔

پاکستانی سنگر فخر عالم نے کہا کہ کچھ کہانیاں ادھوری رہ جاتی ہے اور کچھ کہانیاں اگر نہ بتائیں جائیں تو افسوس رہ جاتا ہے ۔

فیصل قریشی کے فینز کے غمگین دل کے ساتھ فلم کو ختم کرنے پر دکھ کا اظہار کیا بلکہ فلم کے لوک کو بہت سراہا۔

ایک صارف نے لکھا کہ انہیں فلم کی لُک دیکھ کر رونا آ گیا۔

Pakistani cinema

Tabool ads will show in this div