1ارب ڈالرکيلئےآئی ايم ايف تگنی کاناچ نچارہاہے، رانا ثنا

عمران خان کسی کے ساتھ بیٹھنے کو تیار نہیں

وفاقی وزیر داخلہ رانا ثنا اللہ کا کہنا ہے کہ 3 سال پہلے آئی ایم ایف سے معاہدہ غلط اور تاخیر سے کیا گیا اور اب 1 ارب ڈالر کيلئے آئی ايم ايف تگنی کا ناچ نچا رہا ہے۔

شہدا کو سلام

اسلام آباد میں تقریب سے خطاب میں وفاقی وزیر نے شہدا اور غازیوں کی سلام پیش کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں امن و سلامتی ہمارے شہداء کی مرہون منت ہے، قرآن ميں ذکر ہے کہ شہيدوں کو مردہ مت کہو وہ زندہ ہيں، شہداء کی عزت اور احترام ميں اس تقريب کا انعقاد کيا ہے۔

انہوں نے کہا کہ شہداء کے لواحقين کو معاوضہ 30جون تک دينا تھا، کچھ شہداء کے لواحقین کو معاوضہ مل چکا ہوگا، شہداء کی قربانی قوموں کی تقدير بدل ديتی ہيں۔ شہداء کے لواحقين کو يہ رقم 3،4سال سے واجب الادا تھی، يہ رقم ايک ارب22کروڑ روپے بنتی ہے، 80ہزار افراد دہشت گردی کے خلاف جنگ ميں شہيد ہوئے۔ ہم نے جانی نقصان کیساتھ مالی نقصان بھی اٹھايا ہے۔

آئی ایم ایف

مہنگائی سے متعلق وفاقی وزیر نے کہا کہ ہر طرح سے کوشش کی کہ تيل کی قيمت نہ بڑھانی پڑے، پیٹرولیم مصنوعات کی بڑھتی قیمتوں سے بچنا چاہتے تھے، تيل کی قيمت بڑھنے سے بہت زيادہ مہنگائی ہوتی ہے، نگراں حکومت آنے سے صورت حال تھی کہ ملک ڈيفالٹ کی طرف جا رہا تھا۔

سابق حکومت پر تنقید کرتے ہوئے وزیر داخلہ نے کہا کہ آئی ایم ایف کے ساتھ ہر قیمت پر معاہدہ کرنا تھا، 3 سال پہلے آئی ایم ایف سے معاہدہ غلط اور تاخیر سے کیا گیا، جس کی وجہ سے ايک ارب ڈالر کيلئے آئی ايم ايف تگنی کا ناچ نچا رہا ہے۔ جب تک سب سر جوڑ کر نہيں بيٹھيں گے معیشت کا مسئلہ حل نہيں ہوگا۔

ملکی سیاست

موجودہ سیاسی صورت حال پر ان کا کہنا تھا کہ اس وقت تمام جماعتيں ساتھ بيٹھی ہيں، صرف فرد واحد انارکی پھيلا رہا ہے، سابق وزیراعظم کا نام لیے بغیر رانا ثنا کا کہنا تھا کہ وہ شخص سب کو گالياں دے رہا ہے کہتا ہے کسی کو نہيں چھوڑٖوں گا، آپ کے قصے کہانياں آرہی ہيں ان کا آپ نے کبھی جواب نہيں ديا۔

رانا ثنا اللہ کا مزید کہنا تھا کہ تکبر اور غرور انسانوں کو تباہ کرتا ہے، عمران خان کسی کے ساتھ بیٹھنے کو تیار نہیں، یہ کہتے ہیں فلاں کو نہیں چھوڑوں گا، ایک انسان کی اوقات کیا ہے؟ ملک کے مسائل کے حل کے لیے سب کو مل بیٹھنا ہوگا۔

ان کا کہنا تھا کہ موجودہ صورت حال میں نئے انتخابات کا بھی سوچا، ملک نے ماضی میں ڈیڑھ سو ارب ڈالر کا نقصان اٹھایا، ملکی معیشت اور امن وامان کی صورتحال کا حل سیاسی اتفاق رائے میں ہے۔ انہوں نے یہ دعویٰ بھی کیا کہ عمران خان نے فرح گوگی اور احسن گجر کی تقدیر بدلی ہے، فرح گوگی کے سوال پر اب یہ جواب نہیں دیتے۔

IMRAN KHAN

RANA SANAULLAH

IMF.

Tabool ads will show in this div