امریکی باسکٹ بال کھلاڑی برٹنی گرینر کے خلاف روس میں مقدمے کی سماعت

برٹنی گرینر کو انکے سامان سے منشیات ملنے پر حراست میں لیا گیا تھا

امریکا کی باسکٹ بال کھلاڑی برٹنی گرینر کے خلاف روس کی عدالت میں منشیات کے مقدمے کی سماعت شروع ہوگئی۔

دو بار اولمپک گولڈ میڈلسٹ برٹنی گرینر جمعہ کو روسی دارالحکومت کے مضافات میں ایک کمرہ عدالت میں مقدمے کی سماعت کے لیے پہنچیں، انہیں رواں سال فروری میں روس میں انکے سامان سے مبینہ طور پر منشیات ملنے کے بعد گرفتار کیا گیا تھا۔

31 سالہ امریکی ایتھلیٹ کی عدالت میں پیشی کے موقع پر امریکی سفارتخانے کے اہلکار بھی وہاں موجود تھے، اس موقع پر امریکی ناظم الامور الزبتھ گرینر نے صحافیوں کو بتایا گرینر کو غلط طریقے سے حراست میں لیا گیا ہے۔

ادھر کریملن کے ترجمان دمتری پیسکوف نے امریکی ایتھلیٹ کی گرفتاری کے پیچھے سیاسی مقاصد کے تاثر کو مسترد کردیا۔ انہوں نے کہا ہم صرف حقائق پر بات کرسکتے ہیں اور حقائق یہ ہیں کہ امریکی ایتھلیٹ کو غیر قانونی منشیات کے ساتھ حراست میں لیا گیا۔ روسی قوانین میں ایسے جرائم کی سزائیں موجود ہیں جنہیں دینے کا اختیار صرف عدالت کے پاس ہے۔

امریکی حکام کے مطابق بریٹنی گرینراُن دو امریکی شہریوں میں سے ہیں جو اس وقت روس کی غیر قانونی حراست میں ہیں، اس سے قبل امریکی میرین پال وہیلن کو 2018 میں روسی اہلکاروں نے جاسوسی کے الزامات پر حراست میں لیا تھا۔

RUSSIA

AMERICA

Brittney Griner

basketball player

Tabool ads will show in this div