17جولائی کوعوام جس کوووٹ دیں گے وہ قائد ایوان ہوگا، حمزہ شہباز

میرے پاس نمبر نہ ہوتے تو گھر چلا جاتا، میڈیا سے گفتگو

وزیراعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز نے کہا ہے کہ پنجاب کئی ماہ سے آئینی بحران کا شکار رہا ہے، 17 جولائی کوعوام جس کوووٹ دیں گے وہ قائد ایوان ہوگا۔

لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا ضمنی انتخابات کے بعد بحرانی کیفیت ٹل جائے گی، جمہوری انداز میں ضمنی انتخابات کا فیصلہ ہوگا، فیصلے سے بحرانی کیفیت کا خاتمہ ہوگا۔

وزیراعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز نے کہا اگر میرے پاس نمبر نہ ہوتے تو گھر چلا جاتا، صوبے کےعوام کی آسانی کیلئے دن رات ایک کیا، لوگوں نےکہا 200 ارب روپےسبسڈی نہ دیں،پہلےکابینہ بننےدیں، کابینہ نہ ہونے کے باوجود گندم کا اسٹاک پورا کیا۔

انہوں نے کہا تین ماہ میں جتنے بحران آئے گنیزبک میں ہمارے کیس کو نمبر ون رکھا جائے گا، کبھی الیکشن ملتوی ہوتارہا کبھی حلف کا معاملہ التواء کاشکاررہا، عمران خان کی سازش کاپول کھل گیا، اس آدمی نےاپنی اناکی خاطرآئین وقانون کوتوڑا۔

حمزہ شہباز نے کہا سخت فیصلےنہ کرتے تو ملک دیوالیہ ہوجاتا، ہماری جماعت نے یہ سیاسی بوجھ اٹھایا ہے، پیٹرول کی قیمتیں حکومت بچانےکیلئےنہیں بڑھائی گئیں۔

انہوں نے کہا پنجاب کے عوام نوازشریف، شہبازشریف پراعتماد کا اظہار کرینگے، پی ٹی آئی وکلاء نے کہا 22 جولائی کوجورزلٹ آئے گا قبول کریںگے۔

وزیراعلیٰ حمزہ شہباز نے کہا ڈپٹی اسپیکرپرحملہ کیا گیا، کون شاباشی کے اشارے کررہا تھا، 22 جولائی کا الیکشن ہم جیتیں گے۔

cm punjab

HAMZA SHEHBAZ

Tabool ads will show in this div