موجودہ سیٹ اپ کو مسلط کرنے والے ملک کو نقصان پہنچا رہے ہیں، عمران خان

طاقت ور کو این آر او دینے سے قومیں تباہ ہو جاتی ہیں،سابق وزیراعظم

پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ موجودہ سیٹ اپ کو مسلط کرنے کی کوشش کرنے والے پاکستان کو نقصان پہنچا رہے ہیں۔

اسلام آباد ہائی کورٹ بار کے زیر اہتمام تقریب سے خطاب کے دوران عمران خان نے کہا کہ ترقی پذیر ممالک کا یہ مسئلہ ہے وہ طاقت ور کو نہیں پکڑ سکتے، ترقی پذیر ملکوں میں صرف چھوٹے چوروں کو جیلوں میں ڈالا جاتا ہے،طاقت ور کو این آر او دینے سے قومیں تباہ ہو جاتی ہیں۔

چیئرمین تحریک انصاف کا کہنا تھا کہ ہمارے ابتدائی 2 سال بہت مشکل ترين سال تھے ، ہمارےپاس صرف 6 ہفتوں کے اخراجات کے پيسے تھے، آئی ايم ايف نے ہم پر سختی کی، ہمیں قیمتيں بڑھانی پڑيں اور روپیہ بھی گرا، ہماری حکومت کا تیسرا اور چوتھا سال تو بہترین تھا، ہماری حکومت میں مستحکم معاشی ترقی ہوئی۔

عمران خان نے کہا کہ بین الاقوامی تعلقات میں مفاد ہوتے ہیں دوستی نہیں ہوتی، مجھے ایک سال سے خبریں آرہی تھیں کہ کیا منصوبہ بندی ہورہی ہے لیکن میرا دل نہیں مان رہا تھا کیا یہ شہباز شریف کو وزیر اعظم بنائیں گے کیا آصف زرداری پھر سے اقتدار میں آجائے گا۔

چیئرمین تحریک انصاف نے کہا کہ یہ 30 سال سے اس ملک پر مسلط ہیں، میں یہ نہیں کہہ رہا کہ یہ کتنے کرپٹ ہیں، ان پر اتنے کیسز ہیں کہ سمجھ نہیں آتی کہ کس پر بات کی جائے، پرویز مشرف نے این آر او دے کر ملک پر سب سے بڑا ظلم کیا، 10 سال انہوں نے پھر کرپشن کیا۔

عمران خان نے کہا کہ شہباز شریف کو سزا ہونے والی تھی پھر اسے مسلط کیوں کردیا گیا، آج مہنگائی آسمان پر ہے تو اس کا ذمہ دار کون ہے۔ملک کی معیشت جس نہج پر ہے ، اس پر خوف ہے کہ ہمیں مدد کے لیے کہیں پاکستان کی خومختاری پر سمجھوتہ نہ کرنا پڑے۔

سابق وزیر اعظم نے کہا کہ موجودہ سیٹ اپ کو مسلط کرنے کی کوشش کرنے والے پاکستان کو نقصان پہنچا رہے ہیں، موجودہ حالات سے نکلنے کا واحد راستہ آزادانہ اور شفاف انتخابات کا انعقاد ہے۔ ایسے انتخابات نہ ہوں جیسے اس وقت پنجاب میں کرائے جارہے ہیں، ایسے انتخابات سے ملک میں مزید انتشار بڑھے گا۔

PTI

IMRAN KHAN

Tabool ads will show in this div