حمزہ شہباز کو وزارت اعلیٰ سے نہیں ہٹایا گیا، عطاتارڑ کا دعویٰ

عدالت نے وزیراعلیٰ کا انتخاب کالعدم نہیں کیا، صوبائی وزیر

مسلم لیگ ن کے رہنما اور صوبائی وزیر عطا تارڑ کا کہنا ہے کہ لاہور ہائی کورٹ کے فیصلے کے مطابق حمزہ شہباز کو وزارت اعلیٰ سے نہیں ہٹایا گیا اور نہ ہی وزیراعلیٰ کا انتخاب کالعدم قرار دیا گیا۔

لاہور ہائی کورٹ کے باہر میڈیا سے بات کرتے ہوئے مسلم لیگ ن کے رہنما اور صوبائی وزیر عطاتارڑ کا کہنا تھا کہ عدالت نے اپنے فیصلے میں یہ ریمارکس دیئے ہیں کہ وزیراعلیٰ کے انتخاب کے لئے پارٹی کے حکم کے خلاف ووٹ ڈالنے والوں کا ووٹ شمار نہیں کیا جائے گا۔

عطا تارڑ کا کہنا تھا کہ عدالتی فیصلے میں خوش آئند نقطہ یہ ہے کہ عدالت نے نہ تو وزیراعلیٰ کے الیکشن کو کالعدم قرار دیا ہے اور نہ ہی نئے الیکشن کرانے کا حکم دیا ہے۔ بلکہ عدالت نے منحرف اراکین کے 25 ووٹ نکال کر گزشتہ الیکشن کو ہی آگے لے جانے کا کہا ہے۔

لیگی رہنما نے کہا کہ اب اگر مجموعی ووٹوں میں سے 25 اراکین کے ووٹ نکال دیئے جائیں گے تو اس کے بعد ایک رن آف الیکشن ہوتا ہے۔

عطا تارڑ کے مطابق آئین میں یہ واضح طور پر موجود ہے کہ وزیراعلیٰ کے انتخاب کے لئے کی گئی ووٹنگ کی پہلی گنتی میں جو امیدوار 186 کی سادہ اکثریت حاصل نہ کرسکے تو اگلا الیکشن فی الفور ہوگا، اور اسمبلی میں موجود اراکین کی اکثریت سے ہی وزیراعلیٰ کا انتخاب ہوگا۔

صوبائی وزیر نے کہا کہ لاہور ہائی کورٹ کے فیصلے میں کہا گیا ہے کہ حمزہ شہباز اگلے انتخاب تک وزیراعلیٰ پنجاب ہی رہیں گے، اور گورنر پنجاب کو کہا گیا ہے کہ کل شام 4 بجے وزیراعلیٰ کے انتخاب کے لئے اجلاس بلائیں۔

عطا تارڑ کے مطابق عدالتی فیصلے کے مطابق کل ہونے والا اجلاس گزشتہ اجلاس کا ہی تسلسل ہوگا، اور گزشتہ انتخاب میں حمزہ شہبازشریف کے حق میں 197 ووٹ ڈالے گئے تھے، جن میں سے 25 ووٹ منفی کردیئے جائیں تو ہمارے ووٹ 177 بنے ہیں، کیوں کہ ہمارے ناراض ارکان بھی واپس آچکے ہیں۔

صوبائی وزیر کے مطابق اسمبلی میں تحریک اور ان کی اتحادی جماعت ق لیگ کے مجموعی ارکان کی تعداد 168 بنتی ہے، اس طرح ہم 9 ووٹوں کی برتری کے ساتھ موجود ہیں۔

لیگی رہنما نے ایک بار پھر کہا کہ کل ہونے والا اجلاس گزشتہ اجلاس کا تسلسل ہوگا، اور آئین میں درج ہے کہ یہ رن آف الیکشن ہوگا، اور کسی بھی صورت گزشتہ انتخاب کو کالعدم قرار نہیں دیا گیا، نہ حمزہ شہباز کو وزارت اعلیٰ سے ہٹایا گیا ہے، اور جو فیصلے نئی حکومت میں کئے گئے ہیں وہ بھی اپنی جگہ موجود رہیں گے۔

pmln

HAMZA SHAHBAZ

LAHORE HIGHCOURT

Tabool ads will show in this div