ویڈیو: چترال میں گلیشئیر کی برفانی جھیل پھٹ گئی

سندھ کے ساحلی اضلاع میں آندھی،گرج چمک کیساتھ بارش کا امکان

چترال میں ایشپرو گلیشیئر کی برفانی جھیل پھٹنے سے 2 لکڑی کے رابطہ پل بہہ گئے ہیں۔

موسمیاتی تبدیلیوں کے آثار چترال کے سرد علاقوں میں بھی نظر آنے لگے ہیں۔ چترال انتظامیہ کے مطابق درجہ حرارت بڑھنے سے ایشپرو گلیشئیر کی برفانی جھیل پھٹی، جس سے دو رابطہ پل آرکری نالے میں شدید طغیانی کے باعث بہہ گئے ہیں۔ تاہم واقعہ میں کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔

چترال کے مذکورہ مقام آرکری میں گلیشئیر پھٹنے سے برساتی نالے میں شدید طغیانی آگئی ہے۔ یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ ایشپرو کے علاقے میں رواں ماہ برفانی جھیل پھٹنے کا یہ دوسرا واقعہ ہے۔

کراچی بارش

کراچی میں رات گئے ہلکی بارش سے موسم خوشگوار ہوگیا۔ گزشتہ روز بدھ 29 جون کو رات گئے کراچی میں رات گئے سپرہائی وے، اسکیم تینتیس، آئی آئی چندریگرروڈ کے اطراف ، شارع فیصل پر ہلکی بوندا باندی سے موسم خوشگوار اور گرمی کا زور ٹوٹ گیا۔

محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ آج سندھ کے ساحلی اضلاع، بالائی پنجاب، اسلام آباد اور کشمیر میں بارش ہوسکتی ہے جبکہ بالائی سندھ اور جنوبی پنجاب میں موسم شدید گرم رہے گا۔

یکم سے 5 جولائی کے دوران کراچی، حیدر آباد، ٹھٹہ، بدین، دادو، تھر پارکر اور کوئٹہ سمیت بلوچستان کے مختلف علاقوں میں بارش کا امکان ہے۔

محکمے کا یہ بھی کہنا ہے کہ مون سون اسپیل کے دوران کہیں کہیں موسلادھار بارش بھی ہوسکتی ہے، اس حوالے سے اربن فلڈنگ کی وارننگ بھی جاری کردی گئی ہے۔

ملک کے دیگر علاقے

میٹ آفس کے مطابق ملک کے بیشتر علاقوں میں مون سون بارشوں کا سلسلہ شروع ہوگا، اس دوران گوجرانوالہ، سیالکوٹ میں بھی تیز ہواؤں کے ساتھ بارش کا امکان ہے۔ رپورٹ کے مطابق بلوچستان کے مختلف علاقوں اور کشمیر میں بھی بادل برسنے کی توقع ہے۔

اربن فلڈنگ کا الرٹ جاری

محکمہ موسمیات نے یکم جولائی سے بارشوں کا نیا سلسلہ شروع ہونے کے حوالے سے متعلقہ اداروں کو الرٹ رہنے کی ہدایات جاری کردی ہیں۔ جاری کردہ الرٹ کے مطابق یکم جولائی سے 4 جولائی تک کراچی، حیدرآباد، ٹھٹھہ اور بدین میں گرج چمک کے ساتھ بارش کے امکانات ہیں، جب کہ موسلا دھار بارش کے ساتھ اربن فلڈنگ کے خطرات ہیں۔

محکمہ موسمیات نے خبردار کیا ہے کہ موسلا دھار بارش کے باعث کشمیر، خضدار اور لسبیلہ کے ندی نالوں میں طغیانی کا خطرہ پیدا ہو سکتا ہے، جب کہ امکانی بارشوں سے کشمیر، گلیات اور مری میں لینڈ سلائیڈنگ کا بھی خدشہ موجود ہے۔

پی ڈی ایم اے

صوبائی ڈیزاسٹر منیجمنٹ اتھارٹی کی جانب سے اسپیشل ایڈوائزری جاری کی گئی ہے جس میں محکمہ موسمیات کی جانب سے پیش گوئی کا حوالہ دیا گیا۔

ایڈوائزری میں کہا گیا ہے کہ 3 سے 5 جولائی کے دوران کراچی اورحیدرآباد میں اربن فلڈنگ کا خدشہ ہے۔ صوبائی ڈیزاسٹر منیجمنٹ اتھارٹی نے سمندری صورتحال کے باعث ماہی گیروں کومحتاط رہنےکی ہدایت کی ہے۔

ایڈوائزری میں کہا گیا ہے کہ پیشگوئی کی مدت کے دوران بڑھتا ہوا درجہ حرارت کم ہونے کا امکان ہے۔ کراچی ، آندھی اور طوفان سے کمزور مقامات پر ڈھانچوں کو نقصان پہنچنے کا خدشہ ہے۔ صوبائی ڈیزاسٹر منیجمنٹ اتھارٹی کی جانب سے متعلقہ اداروں کوالرٹ رہنے کی ہدایت کی گئی ہے۔

پی ڈی ایم اے سندھ نے متعلقہ اداروں کو ایڈوائزری جاری کرتے ہوئے کہا کہ انتظامیہ ممکنہ اربن فلڈنگ اور دیگر خطرات سے نمٹنے کے لیے تیار رہے۔

نکاسی آب کیلئے مشینیں اور عملے کی موجودگی کو یقینی بنایا جائے، ضروت مند افراد کی مدد کیلئے ایمرجنسی ہیلپ لائن، اسپتالوں میں بجلی کی مسلسل فراہمی کیلیے جنرینٹر اور دیگر انتظامات کئے جائیں۔

ماہی گیروں کیلئے الرٹ جاری

ماہی گیروں کو تین سے پانچ جولائی کے درمیان محتاط رہنے کی ہدایت کی گئی ہیں۔ محکمہ موسمیات کی متعلقہ اداروں سے الرٹ رہنے کی بھی اپیل کی گئی ہے۔ محکمہ موسمیات کے مطابق 30 جون سے مون سون سسٹم ملک بھر میں بارشوں کا سبب بنے گا، جب کہ اس دوران ماہی گیر سمندر میں نہ جائیں اور سمندر سے دور رہیں۔

ممکنہ اثرات

02 سے 04 جولائی کے دوران اسلام آباد، راولپنڈی،لاہور، گوجرانوالہ، سیالکوٹ اور فیصل آبادمیں جبکہ 03 سے 05 جولائی کے دوران کراچی اورحیدرآباد میں موسلادھار بارش کے باعث نشیبی علاقے زیر آب آنے کا خطرہ ۔

ماہی گیروں کو مطلع کیا جاتا ہے کہ وہ 03 سے 05 جولائی کے دوران سمندر کی طلاطم خیزی کے باعث محتاط رہیں ۔

موسلا دھار بارش کے باعث کشمیر، خضدار، لسبیلہ، نصیر آباد،آواران، بارکھان اور کوہلو کے مقامی ندی نالیوں میں طغیانی کا خدشہ ۔

کشمیر،گلیات اور مری میں لینڈ سلائیڈنگ کا خدشہ۔

اس دوران بڑ ھتے ہوئے درجہ حرارت میں کمی متوقع۔آندھی /تیز ہواؤں کے باعث کمزور انفراسٹرکچرکو نقصان کا اندیشہ۔

بارش کا پانی چاول کی کاشت کے لئے مفید ہو گا۔

مسافر اور سیاح اس دوران محتاط رہیں۔

Rain

MET OFFICE

weather forecast

Tabool ads will show in this div