خیبرپختونخواکے ایڈہاک اساتذہ کو مستقل کرنے کی منظوری

خیبرپختونخواکے اساتذہ کا بنی گالہ میں احتجاج رنگ لے آیا

خیبرپختونخوا کابینہ نے 57 ہزار سے زائد ایڈہاک اساتذہ کی مستقلی کی منظوری دے دی۔

صوبائی کابینہ نے خیبرپختونخوا کے گریڈ 12 سے 16 تک بھرتی ہونے والے ایڈہاک اساتذہ کو مستقل کرنے کی منظوری دے دی ہے۔ فیصلے سے 57ہزار 569 اساتذہ کو ریگولرائز کیا جائے گا۔

وزیراعلیٰ کے معاون خصوصی اطلاعات بیرسٹرسیف کا کہنا ہے کہ کابینہ نے ایڈہاک اساتذہ کی منظوری اور غیر قانونی مائننگ پر جرمانہ عائد کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

واضح رہے کہ ایڈہاک اساتذہ نے اپنی مستقلی کے لئے گزشتہ ہفتے سابق وزیراعظم عمران خان کی رہائش گاہ بنی گالہ کے باہر دھرنا دیا تھا۔

بیرسٹرسیف کا کہنا تھا کہ کابینہ نے دریاوں سے ریت اور بجری نکالنے کو قانونی شکل دینے کے لئے مائننگ ایکٹ میں بھی ترامیم کی منظوری دی۔ غیر قانونی طریقے سے آبی گذرگاہوں کو نقصان پہنچانے والوں کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔

غیرقانونی مائننگ میں ملوث کمپنی کو بلیک لسٹ اور 5 سے 15 لاکھ روپے تک جرمانہ ہوسکے گا۔

خیبرپختونخوا کابینہ نے جنگلی حیات کے تحفظ کے لئے چیک پوسٹیں قائم کرنے کا اختیار سیکرٹری کے حوالے کردیا۔

khyber pakhtunkhwa

KP GOVERNMENT

Tabool ads will show in this div