اسلام آباد ہائیکورٹ کا شیخ رشید اور پی ٹی آئی رہنماؤں کو گرفتار نہ کرنیکا حکم

جسٹس اطہر من اللہ نے توہین مذہب اور لانگ مارچ مقدمات کے خلاف درخواستوں کی سماعت کی

اسلام آباد ہائیکورٹ نے شیخ رشید اور تحریک انصاف کے رہنماؤں کی گرفتاری روکنے کے حکم میں 13 ستمبر تک توسیع کردی۔

اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے توہین مذہب اور پی ٹی آئی لانگ مارچ کے تناظر میں درج مقدمات کیخلاف درخواستوں کی سماعت کی۔

عدالت نے دلائل سننے کے بعد پولیس کو شیخ رشید، فواد چوہدری، قاسم سوری سمیت تحریک انصاف کے دیگر رہنماؤں کو تیرہ ستمبر تک گرفتار نہ کرنے کا حکم دے دیا۔

مسجد نبوی ؐ میں نعرے بازی کے الزام میں عمران خان، شیخ رشید، فواد چوہدری، شہباز گل، قاسم سوری سمیت پی ٹی آئی کے 150 افراد پر مقدمات درج کیے گئے تھے۔

واقعے پر جہاں سعودی عرب میں کارروائی ہوئی وہیں پاکستان کے مختلف شہروں میں شہریوں کی درخواست پر مقدمات درج کیے گئے تھے۔ درخواست گزاروں نے مسجد نبویؐ واقعے کی ذمہ داری تحریک انصاف کی قیادت پر عائد کی تھی۔

دوسری جانب 25 مئی کو لانگ مارچ کے دوران توڑپھوڑ کیس میں عدالت نے شیخ رشید ،اسد عمر، شاہ محمود قریشی، شہریار آفریدی ،قاسم سوری ودیگر کے خلاف مقدمات درج ہیں۔

PTI

sheikh rasheed

ISLAMABAD HIGH COURT

Tabool ads will show in this div