بھارتی فوج کی ریاستی دہشت گردی میں مزید دو کشمیری نوجوان شہید

دونوں نوجوانوں کو ضلع کولگام میں تلاشی کے دوران شہید کیا گیا، ایک گرفتار

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج نے ریاستی دہشت گردی کی تازہ کارروائی کے دوران ضلع کولگام میں مزید دو کشمیری نوجوانوں کو شہید کر دیا۔

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق بھارتی فوجیوں نے نوجوانوں کو ضلع کولگام کے علاقے تربجی میں محاصرے اور تلاشی کی کارروائی کے دوران شہید کیا، آخری اطلاعات تک علاقے میں بھارتی فوج کا آپریشن جاری تھا۔

بھارتی فورسز نے سری نگر، کپواڑہ، بارہمولہ، بانڈی پورہ، گاندربل، اسلام آباد، پلوامہ، شوپیاں، کولگام، کشتواڑ، ڈوڈہ، سانبہ اور کٹھوعہ میں گھروں پر چھاپوں کا سلسلہ جاری رکھا، ڈوڈہ میں ایک گھر پر چھاپے کے دوران ایک نوجوان کو گرفتار کر لیا گیا۔

سری نگر جموں شاہراہ پر بھی گاڑیوں اور ان میں سوار مسافروں کی چیکنگ کا سلسلہ تیز کردیا گیا ہے، سری نگر شہر اور دیگر علاقوں میں بھی گاڑیوں اور مسافروں کی تلاشی کے بہانے انکی تذلیل کی گئی۔

دریں اثنا امریکی نشریاتی ادارے ’’این بی سی نیوز“ نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں صحافیوں کو خوف و ہراس کے ماحول کا سامنا ہے جو انہیں علاقے کی صورتحال کے بارے میں آزادانہ رپورٹنگ سے روک رہا ہے۔

2019 سے ابتک کشمیر میں کم از کم 35 صحافیوں کو اپنے کام کے سلسلے میں پولیس کی پوچھ گچھ، چھاپوں، دھمکیوں، تشدد یا مجرمانہ مقدمات کا سامنا کرنا پڑا۔

STATE TERRORISM

Indian occupied kashmir

Kashmiris killing

Tabool ads will show in this div