اب ہم اپنے ووٹ پر ڈاکا نہیں پڑنے دیں گے، وسیم اختر

ہم آنکھیں بند کرکے نہیں بیٹھے

ایم کیوایم پاکستان کے ڈپٹی کنوینر اور سابق میئر کراچی وسیم اختر نے کہا کہ 2018 کے انتخابات میں ہمارے مینڈیٹ کو چوری کیا گیا لیکن اب ہم اپنے ووٹ پر ڈاکا نہیں پڑنے دیں گے۔

کراچی میں پریس کانفرنس کے دوران وسیم اختر نے کہا کہ گزشتہ روز سندھ کے 14 اضلاع میں بلدیاتی انتخابات میں بہت سی جگہ عملے کو اغوا کیا گیا، جس جماعت نےبھی الیکشن میں حصہ لیا کوئی مطمئن نہیں۔ چیف الیکشن کمشنر ہمارے تحفظات سنیں اور کوئی فیصلہ دیں۔

سابق میئرکراچی نے کہا کہ جب ہمارے سیاسی جماعتوں سےہوئے تھے توسب نے کہا تھا کہ انتخابی اصلاحات کے بعد ملک میں شفاف اورغیرجانبدارانتخابات ہوں گے لیکن ایسا نہیں ہوسکا۔جب 14 اضلاع میں بلدیاتی انتخابات میں یہ حال ہے تو 2023 کے عام انتخابات میں کتنی دھاندلی ہوگی۔

وسیم اخترنےکہا کہ ہم آنکھیں بند کرکے نہیں بیٹھے، ہمارا کراچی اور حیدرآباد سمیت سندھ بھر میں ہم کام کررہے ہیں، ہمارے لوگوں نے ساری دھاندلی دیکھی ہے۔ ہمارے افسران اور الیکشن کمیشن جانبدار نہ ہوتے تو غلط حلقہ بندیاں کبھی نہ ہونے دیتے۔

رہنما ایم کیوایم نے کہا کہ ہم نے اپنی نا کامیوں اور غلطیوں سے بہت سبق سیکھے ہیں ، ہمارا اپنا ایک مینڈیٹ ہے، ہمارے مینڈیٹ اور مسائل کو ملک کی سیاسی قیادت میں تسلیم کیا ہے۔

وسیم اختر نے کہا کہ پیپلز پارٹی سےمعاہدے میں طے تھا کہ ایک دوسرے کے مینڈیٹ کوتسلیم کریں گے، پیپلزپارٹی نے اس معاہدے کی خلاف ورزی کی ہے۔ جو کچھ اندرون سندھ ہوا نہیں چاہتےکراچی اور حیدرآباد میں بھی ہو، ایسا الیکشن یہاں نہیں ہونے دیں گے۔

رہنما ایم کیوایم کا کہنا تھا کہ 2018 کے انتخابات میں ہمارے مینڈیٹ کو چوری کیا گیا لیکن اب ہم اپنے ووٹ پر ڈاکا نہیں پڑنے دیں گے۔ ایسا نہ ہو کہ حالات وہاں چلے جائیں جہاں سنبھالے نہ جاسکیں۔

Wasim Akhtar

MQM Pakistan

Tabool ads will show in this div