لاہور میں 13 سالہ بچہ مبینہ زیادتی کے بعد قتل

مجاہد کو گلا کاٹ کر قتل کیا گیا، پولیس

لاہور کے علاقے اسلام پورہ میں گھر کے واش روم سے 13 سالہ لڑکے کی گلا کٹی لاش برآمد ہوئی ہے جب کہ پولیس کا کہنا ہے کہ لڑکے کو زیادتی کے بعد قتل کیا گیا ہے۔

لاپور کے تھانہ شاہدرہ کے علاقے اسلام پورہ میں ایک گھر کے واش روم سے لڑکے کی لاش ملی ہے، مقتول کی شناخت 13 سالہ مجاہد کے نام سے ہوئی ہے۔

مجاہد کے والد کا کہنا تھا کہ ان کا بچہ مکان مالک شہباز کی دکان پر ملازمت کرتا تھا۔ گزشتہ روز مجاہد کام سے واپس گھر نہیں آیا تھا، بچے کے والدین رات بھر بچے کو تلاش کرتے رہے۔ علی الصبح شہباز نے انہیں فون کرکے بتایا کہ مجاہد کی اس کے بھائی سے لڑائی ہوگئی ہے ۔ وہ مجاہد کو اس کے گھر جاکر دیکھ لے۔

مقتول کے باپ نے مزید کہا کہ وہ شہباز کی کال سن کر اس کے گھر پہنچے تو گھر پر خلاف توقع تالا لگا تھا، انہوں نے پولیس کو اطلاع دی، ان ہی کی درخواست پر پولیس گھر کا تالا توڑ کر اندر داخل ہوئی۔ جہاں غسل خانے سے لاش ملی۔

پولیس اور فرانزک ٹیموں نے موقع پر پہنچ کر شواہد اکٹھے کرکے تحقیقات شروع کردی ہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ ابتدائی شواہد سے لگتا ہے کہ بچے کو زیادتی کے بعد قتل کیا گیا ہے، تاہم پوسٹ مارٹم کی رپورٹ آنے تک اس بارے میں حتمی طور پر کچھ نہیں کہا جاسکتا۔

ڈی ایس پی شاہدرہ کا کہنا ہے ملزم فیملی سمیت فرار ہے جس کی تلاش جاری ہے جلد ہی ملزمان کو گرفتار کرکے کیفر کردار تک پہنچایا جائے گا۔

آئی جی پنجاب کا نوٹس

آئی جی پنجاب راؤ سردار علی خان نے بھی واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے سی سی پی او لاہور سے رپورٹ طلب کرلی۔

آئی جی پنجاب نے ملزمان کی فوری گرفتاری کے لیے ہر ممکن اقدامات کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ لواحقین کو انصاف کی فراہمی ترجیحی بنیادوں پر یقینی بنائی جائے۔

murder case

Rape and Murder

Tabool ads will show in this div