منی کرپشن کیس؛ مونس الٰہی کا نواز بھٹی اور مظہر عباس کو پہچاننے سے ہی انکار

عمر شہریار سے کاروباری تعلق ہے لیکن ‘آر وائے کے’ گروپ بنانے میں کوئی کردار نہیں، مونس الٰہی

سابق وفاقی وزیر چوہدری مونس الٰہی نے منی لانڈرنگ کیس میں نواز بھٹی اور مظہر عباس کو پہچاننے سے ہی انکار کردیا ہے۔

مونس الہیٰ اور دیگر کے خلاف24 ارب روپے کی منی لانڈرنگ کی تحقیقات جاری ہیں۔ ایف آئی اےنے اس حوالے سے مونس الٰہی سے 33سوالات کيے تھے جس کے جواب جمع کرادیئے گئے ہیں۔

مونس الٰہی نے نواز بھٹی اور مظہر عباس کو پہچاننے سے ہی انکار کرديا۔ اپنے جواب میں انہوں نے کہا کہ انہیں نواز بھٹی کے 32 بینک اکاؤنٹس اور شيئرز کا کچھ علم نہيں۔

مونس الٰہی نے اپنے جواب میں کہا ہے کہ ان کا عمر شہریار سےکاروباری تعلق ہے لیکن ‘آر وائے کے’ گروپ بنانےمیں کوئی کردار نہیں۔

جواب میں کہا گیا ہے کہ ان کے بھائی راسخ الہیٰ نے شیئرز تحفے میں دیئے، ایف بی آر میں جمع تفصیلات میں سب کچھ ڈکلیئرڈ ہے۔

مونس الہیٰ کے خلاف رواں ماہ 15 جون کو ایف آئی اے لاہور نے منی لانڈرنگ کا مقدمہ درج کیا تھا۔ایف آئی اے نے سیکریٹری پنجاب اسمبلی محمد خان بھٹی کے دو قریبی عزیزوں نواز بھٹی اور مظہر عباس کو بھی گرفتار کرکے ان افراد کے خلاف بھی مقدمہ درج کیا ہے۔

PMLQ

Monis Ilahi

Tabool ads will show in this div