عمران خان اورسہولت کارفوادچوہدری نے پی ٹی وی کامعاشی قتل کیا،مریم اورنگزیب

ملوث افراد کو جرم کے مطابق سزائیں دی جائیں گی

وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات مریم اورنگزیب نے سابق حکومت پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف ( پی ٹی آئی ) نے پی ٹی وی کو اپنے مقاصد کیلئے استعمال کیا، نجی چینل کو منافع دینے کیلئے معاہدے کیے گئے۔ ملوث افراد کو جرم کے مطابق سزائیں دی جائیں گی۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات مریم اورنگزیب نے سابق حکومت اور ان کے دور میں سرکاری ٹی وی ( پی ٹی وی) کی کارکردگی پر تابڑ توڑ حملے کردیئے۔ مریم اورنگزیب نے کہا کہ عمران خان کی جانب سے سارعی ہدایت پی ٹی وی کی انتظامیہ کو دی جاتی۔ اس وقت کے وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے سرکاری ٹی وی کے معاشی قتل میں سہولت کار کا کردار ادا کیا۔ پی ٹی وی پر رائٹس کے نام پر ڈاکا ڈالا گیا۔ پی ٹی وی اسپورٹس واحد اسکرین ہے جس سے پی ٹی وی ریونیو حاصل کرتا ہے، مگر پی ٹی آئی کے دور میں اس ریونیو کو خسارے میں تبدیل کیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ پی ٹی وی قومی نشریاتی ادارہ ہے اور پاکستان کی پہچان ہے، آج پاکستان کے اندر مکمل آزادی صحافت ہے، صحافت ریاست کا چوتھا ستون ہے اور پی ٹی آئی حکومت اسے ہی نیلام کرنے کی باتیں کرتی تھی، تحریک انصاف کے دور میں پی ٹی وی کو اپنا ماؤتھ پیس بنا کر پیش کیا گیا۔ اپنی مرضی کے ایجنڈے پی ٹی وی پر نافذ کیے گئے۔ سال 2014 کے دھرنے میں پی ٹی وی کے اندر ان ہی کی پارٹی کے لوگ گھسے، عمران خان نے اس حرکت پر اپنے کارکنان کو شاباش دی، سال 2018 میں جب پی ٹی آئی حکومت میں آئی تو کہا گیا پی ٹی وی کو بی بی سی کا ماڈل بنائیں گے، پھر کہا گیا کہ پی ٹی وی اور ریڈیو کی بلڈنگز کو نیلام کریں گے۔

نجی چینل سے معاہدہ

سال 2022 کو جب ہماری حکومت آئی تو ہم نے پی ٹی وی اسپورٹس کے حوالے سے ایک معاہدہ کیا، ہم نے آتے ہی پی ٹی وی اور اس نجی چینل کے مابین معاہدے کے حوالے سے ایک کمیٹی بنائی، اس سے قبل کرکٹ دکھانے کے رائٹس صرف پی ٹی وی کے پاس تھے، اس غیر قانونی معاہدے کا منصوبہ تیار کیا گیا، ماضی میں پی ٹی وی پر دن دھاڑے ڈاکا ڈالا، منصوبے کے تخت پی ٹی وی اسپورٹس نے پی ٹی وی بورڈ کو کہا کہ پی ٹی وی کے پاس اس معاہدے کے لیے پیسے نہیں، کہا گیا ہمارے پاس ایک کمپنی ہے جس کے توسط سے پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کے تحت معاہدہ ہوسکتا ہے، نیلامی کے لیے اشتہار چھاپا گیا جس میں کہا گیا کہ پی ٹی وی کو ایک نیا انفراسٹرکچر چاہئیے۔ لوگوں کو بے وقوف بنانے اور کرپشن کیلئے یہ کہا گیا کہ پی ٹی وی کو ایس ٹی ڈی سے ایچ ڈی کیا جائے گا، نیلامی کے لیے چار کمپنیاں آئیں جس کے لیے ایک کمیٹی بنائی گئی، کمیٹی نے جانچ پڑتال کرکے اسی نجی چینل سمیت تین کمپنیوں کا انتخاب کیا، بعد ازاں کمیٹی نے اس چینل کو 300 میں سے 167 نمبر دیئے۔

وفاقی وزیر اطلاعات نے کہا کہ آسان راستہ تھا پریس ٹاک کر کے الزام لگاتے اور انہیں جیلوں میں ڈال کر بھول جاتے کیونکہ سابق دور میں پی ٹی وی کے ساتھ جو کچھ ہوا اس کے نتائج آج پی ٹی وی بھگت رہا ہے۔ پی ٹی وی اور ایم گروپ، اور نجی چینل کے ساتھ معاہدے پر دستخط ہوئے۔ پی ٹی وی کی تاریخ میں یہ پہلی مرتبہ ہوا کہ اس کام کے لیے ہمارے پاس پیسے نہیں ہیں اور پی ٹی وی وہ ادارہ ہے جس کا 100 فیصد شیئر حکومت پاکستان اون کرتی ہے۔ پی ٹی وی اسپورٹس پی ٹی وی بورڈ کے پاس گیا اور کہا کہ ہم تباہ گئے۔ سال 2018 میں معیشت کو بھی پی ٹی آئی نے بری طرح تباہ کیا، جب کہ سابق حکومت جب پی ٹی وی کو نیلام کرنے جا رہی تھی تو اظہار دلچسپی کا اشتہار ایک اخبار میں 10 اگست 2021 کو شائع ہوا۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان ٹیلی ویژن کا منہ، آنکھیں کاٹ دیئے گئے، صادق اور امین گریبانوں میں دیکھیں۔ عمران خان نجی چینل کو اپنے مقاصد کے لیے استعمال کر رہے ہیں اور من پسند کمپنی نےایچ ڈی آلات اور کیمرے کرائے پر منگوا کر پی ٹی وی کو دیئے۔

اس موقع پر مریم اورنگزیب نے کہا کہ وعدہ کرتی ہوں کہ پی ٹی وی کو يہ رائٹس واپس ليکر دوں گی، عمران خان آپ نے وہ جرم کیا جس کی معافی نہيں ملے گی، عمران خان نے ڈیل کے ذریعے پی ٹی وی کا معاشی قتل کيا، اس معاملے کی تفصيلات زيادہ گھناؤنی ہیں، کسی کے ساتھ کوئی رعايت نہيں ہوگی، سب کو سزا ہوگی، مجھے کہا گيا انٹرنل انکوائری کر کے ڈپارٹمنٹل سزائيں دے ديں، ڈيل کے دستاويزات پبلک کرديے اور شوکاز نوٹسز بھی جاری کرديئے، پی ٹی وی اسپورٹس کا کمپیٹيٹر کھڑا کيا گيا۔ ایک مخصوص چینل کو فائدہ دینے کیلئے جو جو سازشیں کی گئی ہیں، ان سب کو بے نقاب کریں گے۔

مریم اورنگزیب نے کہا کہ عمران خان کے وعدوں کی کوئی عملی شکل عوام کے سامنے موجود نہیں۔ ڈاکے کی ایسی سزائیں نہیں ہوتیں کہ شوکاز دے کر معاف کردیا جائے۔ ایف آئی اے کو کوائف دے دیئے گئے ہیں کیونکہ یہ غیر قانونی ڈیل ہے اور مکمل تفصیل ہم پیر کو جمع کرا دیں گے۔ بطور چیف ایگزیکٹو غیر قانونی ڈیل کو ختم کرنے کا حق رکھتی ہوں۔

ptv

IMRAN KHAN

fawad chaudhary

SPORTS CHANNEL

Tabool ads will show in this div