پاکستان کو چین سے 2 ارب 30 کروڑ ڈالر موصول

وفاقی وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے تصدیق کردی

پاکستان کو چین سے 2 ارب 30 کروڑ ڈالر موصول ہوگئے۔

معاشی میدان سے پاکستان کیلئے اچھی خبر یہ ہے کہ دوست ملک چین سے پاکستان کو 2 ارب 30 کروڑ ڈالر موصول ہوگئے ہیں۔

اس حوالے سے تصدیق کرتے ہوئے وفاقی وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے اپنی ٹویٹ میں بتایا کہ چین کی جانب سے پاکستان کو 2 ارب 30 کروڑ ڈالر مل گئے، جو اسٹیٹ بینک آف پاکستان میں جمع ہوگئے ہیں، جس سے ہمارے زرمبادلہ کے ذخائر میں اضافہ ہوگا۔

پاکستان کے زرمبادلہ کے ذخائر مسلسل گررہے تھے، تاہم چند روز قبل ہی پاکستان اور چین کے مابین کمرشل قرضے کے معاہدے پر دستخط ہوئے تھے اور آج اسٹیٹ بینک آف پاکستان کو یہ رقم موصول ہوگئی ہے۔

پاکستان کو ملنے والی رقم 2 ارب 30 کروڑ ڈالر ہے، گزشتہ روز کے اعداد وشمار کے مطابق اسٹیٹ بینک کے پاس 17 جون کو 8 ارب 23 کروڑ ڈالر موجود تھے، جب کہ مجموعی طور پر 14 ارب 21 کروڑ ڈالر تھے، جس میں 5 ارب 97 کروڑ ڈالر کمرشل بینکوں کے بھی ہیں۔

تاہم اب چین سے ملنی والی رقم کے بعد پاکستان کے زرمبادلہ کے ذخائر ساڑھے 10 ارب ڈالر تک پہنچ جائیں گے اور مجموعی ذخائر کی مالیت تقریباً ساڑھے 16 ارب ڈالر سے تجاوز کرجائے گی۔

چین سے کمرشل قرضے کا معاہدہ

دو روز قبل وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے اپنے ٹویٹر پیغام میں بتایا تھا کہ چین سے 2.3 ارب ڈالر کے فنڈز ایک دو روز میں موصول ہوجائیں گے، چینی بینکوں کے کنسورشیم نے آج قرض کی سہولت کے معاہدے پر دستخط کردیئے۔

وزیر خزانہ کا کہنا تھا کہ پاکستان کی جانب سے معاہدے پر کل دستخط کئے گئے تھے۔

مفتاح اسماعیل نے مزید کہا کہ رقم کی منتقلی اور ٹرانزیکشن میں معاونت پر چینی حکومت کے شکر گزار ہیں۔

واضح رہے کہ عمران خان کی حکومت کے خاتمے کے بعد موجودہ اتحادی حکومت نے آئی ایم ایف اور چینی حکومت سے قرض پر بات چیت شروع کی تھی۔

dollar

state bank of pakistan

foreign exchange reserves

Tabool ads will show in this div