کراچی میں کرونا کیسز میں اضافہ

ہفتہ وار شرح 10 اعشاریہ 37 فیصد ہوگئی

کراچی میں ایک بار پھر کرونا وائرس کے کیسز میں اضافہ ہوگیا۔

محکمہ صحت سندھ کے مطابق ‏کراچی سمیت سندھ بھر میں کرونا کیسز کی شرح میں اضافہ ہوا ہے، جہاں 24 گھنٹوں کے دوران 57 نئے کیسز سامنے آئے ہیں۔

ریکارڈ کیے گئے اعداد و شمار کے مطابق کراچی میں مثبت کیسز کی شرح 8 فیصد تک پہنچ گئی ہے، جب کہ کرونا کیسز کی ہفتہ وار شرح 10 اعشاریہ 37 فیصد ہوگئی ہے۔

صوبے کی بات کی جائے تو سندھ میں کرونا کیسز کی ہفتہ وار شرح 2 اعشاریہ 86 فیصد ریکارڈ کی گئی ہے،

واضح رہے کہ حالیہ دنوں میں پاکستان کے مختلف شہروں میں کرونا وائرس کے کیسز میں ایک بار پھر اضافہ ہو رہا ہے۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ کرونا ٹیسٹنگ میں کمی کی وجہ سے بھی کیسز میں اضافہ ہو رہا ہے۔

اس سے قبل گزشتہ ہفتے اسلام آباد میں کرونا مثبت کیسز کی شرح 2.10 فیصد ریکارڈ کی گئی۔ جب کہ اس دوران 24 گھنٹے میں کرونا کے 1236 سے زائد ٹیسٹ ہوئے، جس میں سے 26 مثبت نکلے تھے۔

یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ ماہرین صحت کی جانب سے اومی کرون کے نئے ویرینٹ سے متعلق بیانات بھی سامنے آئے ہیں۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ اومی کرونا کا نیا ویرینٹ مدافعتی نظام کو چکما دے رہا ہے۔

ڈاؤ میڈیکل کالج اینڈ یونیورسٹی کی کرونا لیب کے انچارج ڈاکٹر سعید خان کہتے ہیں کہ شہری بوسٹر ڈوز لگوائیں تاکہ کرونا کا مقابلہ کیا جا سکے۔

آغا خان اسپتال

آغا خان اسپتال کی انتظامیہ کی جانب سے جاری ہدایات میں اسپتال کے اندر اور باہر فیس ماسک کو ضروری قرار دے دیا گیا ہے۔

اسپتال انتظامیہ کے مطابق شہر میں ایک بار پھر کرونا وائرس کے کیسز میں خطرناک حد تک اضافے کے باعث آغا اسپتال انتظامیہ نے فیس ماسک کو لازمی قرار دیا ہے، جب کہ عملے اور اسٹوڈنٹس کیلئے بوسٹر کی دوسری ڈوز بھی لازمی قرار دی گئی ہے۔

انتظامیہ کا کہنا ہے کہ بوسٹر ڈوز کیلئے کسی بھی ویکسین سینٹر سے رجوع کیا جا سکتا ہے۔

اسپتال کے اسپورٹس اور دیگر مراکز میں بھی صرف 50 فیصد لوگوں کو شرکت کی اجازت ہوگی۔

Tabool ads will show in this div