سندھ اسمبلی کے بجٹ اجلاس میں شرجیل میمن کا اپوزیشن اراکین پر حملہ

کلثوم چانڈیو نے دعا بھٹو کا موبائل چھین لیا، منور وسان موبائل لے کر فرار

بجٹ اجلاس کے دوران سندھ اسمبلی اکھاڑے میں تبدیل ہوگئی، شرجیل میمن نے اپوزیشن رکن کو کتاب دے ماری، پیپلزپارٹی کی کلثوم چانڈیو اور پی ٹی آئی کی دعا بھٹو کے درمیان بھی ہاتھا پائی ہوگئی۔

سندھ اسمبلی کے بجٹ اجلاس میں پی ٹی آئی اراکین کی جانب سے شدید احتجاج کیا گیا، اس موقع حکومتی اور اپوزیشن اراکین آمنے سامنے آگئے۔

صوبائی وزیر شرجیل میمن نے اپوزیشن رکن کو کتاب دے ماری، اراکین ایک دوسرے سے الجھتے رہے، شرجیل میمن اراکین اسمبلی کو مکے اور تھپڑ بھی مارتے رہے۔

پی پی پی کی کلثوم چانڈیو نے پی ٹی آئی کی رکن دعا بھٹو کا موبائل فون چھین کر ساتھی رکن منور وسان کو دے دیا، منور وسان موبائل فون لے کر بھاگ گئے۔

نمائندہ سماء سنجے سادھوانی کے مطابق واقعے کے بعد ایوان میں جرگہ ہوا اور دعا بھٹو کا موبائل فون انہیں واپس دلوانے کی کوشش کی گئی تاہم پی پی اراکین نے پی ٹی آئی رکن کا موبائل فون واپس نہیں کیا۔

دعا بھٹو نے کہا کہ میرا موبائل فون چھینا گیا، مقدمہ درج کراؤں گی۔

Sindh assembly

BUDGET 2022-23

SINDH ASSEMBLY CLASH

Tabool ads will show in this div