تحریک انصاف میں دھڑے بندیاں، ٹکٹوں کا فیصلہ تاخیر کا شکار

ٹکٹوں کا اعلان نہ ہونے کی وجہ پارٹی میں دھڑے بندیاں اور آپسی جھگڑے ہیں۔
<p>فوٹو:فائل</p>

فوٹو:فائل

تحریک انصاف پنجاب میں پھوٹ پڑنے کے باعث ضمنی انتخابات کے لئے ٹکٹوں کا فیصلہ تاحال نہ ہوسکا۔

پنجاب اسمبلی کی 20 نشستیں پی ٹی آئی منحرف ارکان کی وجہ سے خالی ہوئی تھیں، اور الیکشن کمیشن نے ان خالی حلقوں میں 17 جولائی کو ضمنی انتخابات کا اعلان کررکھا ہے، تاہم پی ٹی آئی ضمنی انتخابات کیلئے تاحال ٹکٹوں کی تقسیم کا فیصلہ نہیں کرسکی۔

چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان نے امیدواروں کے انٹرویوزبھی کئے، اور خود انتخابی مہم کی نگرانی کرنے کا فیصلہ کیا تھا، تاہم ذرائع کا کہناہے کہ ضمنی انتخابات کے لئے ٹکٹوں کا اعلان نہ ہونے کی وجہ پارٹی میں دھڑے بندیاں اور آپسی جھگڑے ہیں۔

گزشتہ روز بھی پی ٹی آئی کی پارليمانی پارٹی کا اجلاس ہوا تھا، جس میں تحریک انصاف نظریاتی گروپ اور پی ٹی آئی پرویز الہیٰ گروپ سامنے آیا۔

اتوار کو ہونے والے اجلاس میں پنجاب اسمبلی میں اپوزيشن ليڈر کے معاملے پر بھی اتفاق نہ ہوسکا جب کہ سابق وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار اور ياسمين راشد ناراض ہوکر اجلاس سے اٹھ کر چلے گئے۔

پارٹی ذرائع نے اس بات کا عندیہ دیا ہے کہ پرويز الہیٰ مبینہ طور پر محمود الرشيد يا راجہ بشارت کو پنجاب اسمبلی میں اپوزيشن ليڈر بنانا چاہتے ہیں، جب کہ نظریاتی گروپ میاں اسلم اقبال کو اپوزیشن لیڈر بنانے کی خواہش مند ہے۔

اس سے قبل پی ٹی آئی نے پنجاب اسمبلی میں محمود الرشید کو اپوزیشن لیڈر جبکہ ڈپٹی اپوزیشن لیڈر میاں اسلم اقبال کو بنانے کا فیصلہ کرلیا تھا تاہم اس پر پارٹی کے اندر اختلافات سامنے آرہے ہیں۔

PTI

PUNJAB BYE ELECTION

Tabool ads will show in this div