وزیراعظم کی برآمدی صنعتوں کے خام مال پرٹیکس ختم کرنے کی ہدایت

ٹاسک فورس بنانے کا بھی اعلان

وزیراعظم میاں محمد شہباز شریف نے برآمدی صنعتوں کے خام مال پر تمام ٹیکس ختم کرنے اور مختلف سیکٹرز میں سرمایہ کاری بڑھانے کیلئے ٹاسک فورس بنانے کا اعلان کردیا۔

بدھ 8 جون کو وزیراعظم پاکستان میاں محمد شہباز شریف سے امریکی سرمایہ کاروں کے وفد نے ملاقات کی۔

ملاقات میں فارما، فوڈ پراسیسنگ، آئی ٹی سیکٹر، ای کامرس، ریٹیل سیکٹر، ٹیکسٹائل، اسپورٹس اور لاجسٹکس کے شعبوں سے تعلق رکھنے والے نمائندوں نے بھی شرکت کی۔ ملاقات میں وفاقی وزراء سید نوید قمر، مخدوم مرتضیٰ محمود، مریم اورنگزیب اور دیگر متعلقہ افسران بھی موجود تھے۔

اس موقع پر شرکا کا کہنا تھا کہ حکومت کی پالسیوں کی بدولت سرمایہ کاروں کا اعتماد بحال ہوا ہے، بجٹ سے پہلے حکومت کی تمام اسٹیک ہولڈرز سے مشاورت خوش آئند ہے۔

اس موقع پر وزیراعظم کی جانب سے سیکٹری کامرس اور سیکٹری سرمایہ کاری بورڈ کو سرمایہ کاروں کے مسائل فوری حل کرنے کی ہدایت کی گئی۔

ملاقات میں وزیراعظم نے ہدایت دیتے ہوئے کہا کہ ایک ہفتے کے اندر تمام مسائل کا سدِباب کرکے رپورٹ پیش کی جائے۔ ملک میں سرمایہ کاری بڑھانے کیلئے وزیراعظم نے مختلف سیکٹرز میں سرمایہ کاری بڑھانے کیلئے ٹاسک فورس بھی بنانے کا حکم دیا۔

شہباز شریف کا کہنا تھا کہ برآمدی صنعتوں کے خام مال پر تمام ٹیکس ختم کئے جائیں۔ سیاحت، فارما، آئی ٹی، ای کامرس، بڑے پیمانے پر مینوفیکچرنگ اور زراعت پر ٹاسک فورس بنائی جارہی ہے۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ حکومت پاکستان میں ایکپسورٹ کوالٹی کی زرعی اجناس کی پیداوار یقینی بنا رہی ہے، تاریخ میں پہلی مرتبہ پالیسیوں کے تسلسل کی بات ہم نے کی ہے، ہم ملکی معیشت اور عام آدمی کی فلاح سیاست سے بالاتر ہیں۔

TAX

PM SHAHBAZ SHARIF

US BUSINESS

Tabool ads will show in this div