کچھ کرنہیں سکتے تو اُترکیوں نہیں جاتے؟

پٹرول کی قیمتوں نے عوام کی بس کرادی

پاکستان کے تمام بڑے شہروں میں گزشتہ شام ہی پٹرول پمپس پر لمبی قطاریں دیکھی گئیں جس کی وجہ رات 12 سے قیمتوں میں مزید اضافے کی غیرمصدقہ خبرتھی۔

اس خبرکی بنیاد وفاقی وزیرخزانہ مفتاح اسماعیل کا ایک پری بجٹ سیمینارکے دوران کیا جانے والاخطاب تھا جس میں ان کا کہنا تھا کہ عالمی منڈی میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ پر پاکستان میں بھی قیمتیں بڑھیں گی۔

اس بیان کے مختلف میڈیا چینلزپرنشرہوتے ہیں پٹرول کی قیمتوں میں رات 12 بجے 27 سے 30 روپے اضافے کی افواہ تیزی سے پھیلی اورعوام نے حسب استطاعت پٹرول کے حصول کے لیے پمپس کا رخ کرنا شروع کردیا۔

ٹوئٹرپربھی ہیش ٹیگ کے ساتھ فیول پرائس ٹاپ ٹرینڈ بن گیا جہاں صارفین نے ٹویٹس میں خوب دل کے پھپھولے پھوڑے۔

عوام ذہنی طور پرگاڑی سے سائِکل کے سفرکے لیے تیار دکھائی دیتے ہیں۔

اب آپ شادی کی سالگرہ پرسونے چاندی کے بجائے بیگم کو پٹرول بھی گفٹ کرسکتے ہیں۔

کئی صارفین نے حکومت کے لیے ارتضیٰ نشاط کا یہ مقبول ترین شعر لکھ کرحال دل بیان کیا۔

صارفین نے حکومت کی جانب سے 40 ہزار سے کم تنخواہ پانے والوں کے لیے اعلان کردہ 2 ہزار روپے کو خرچ کرنے کے آئیڈیاز بھی دیے۔

باشعورصارفین نے عوام کو قیمتوں میں اضافے کیخلاف احتجاج کا مفید مشورہ بھی دیا۔

عوام آنے والے دنوں کے لیے متوقع تیاری کر کے رکھیں۔

ٹک ٹاکرزنے بھی درست وقت پراپنا حصہ ڈالا۔

اس تمام افراتفری کے بعد بعد ازاں وزیرخزانہ کی جانب سے وضاحت جاری کی گئی کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں آج رات سے اضافہ نہیں کیا جارہا اور نہ ہی اس حوالے سے کوِئی سمری منظور کی گئی ہے۔

دوسری جانب مسلم لیگ (ن) کے سینیر نائب صدر اورسابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کا کہنا ہے کہ عالمی منڈی ميں پیٹرولیم مصنوعات کی قيمتيں کم ہوں گی تویہاں بھی کم ہوجائيں گی۔ حکومت پٹروليم مصنوعات پرايک پيسہ ٹيکس نہيں لے رہی، عالمی منڈی ميں قيمتيں کم ہوں گی تویہاں بھی کم ہوجائيں گی۔

انہوں نے کہا کہ بجلی کے بحران پر قابو پانے کی کوشش جاری ہے۔ 16 جون سے لوڈ شیڈنگ 3 گھنٹے سے بھی کم ہوجائے گی، 30 جون سے لوڈ شیڈنگ 2 گھنٹے سے بھی کم ہوجائے گی اور جولائی میں لوڈشیڈنگ کو مزید کم کرنے میں کامیاب ہوجائیں گے۔

petrol

Fuel price

Petrol price hike

PMLN,

Tabool ads will show in this div