ملک میں غیرقانونی سگریٹ کی تجارت میں خطرناک حد تک اضافہ

قومی خزانے کو سالانہ 70 سے 80 ارب روپے نقصان ہونے لگا

ملک میں غیرقانونی سگریٹ کی تجارت سے قومی خزانے کو سالانہ 70 سے 80 ارب روپے کا نقصان ہونے لگا۔

پاکستان ٹوبیکو کمپنی کے مطابق سگریٹ کی ڈبی کی کم سے کم قانونی قیمت 62 روپے 80 پیسے ہے جبکہ مارکیٹ میں سگریٹ کا ایک پیکٹ 15 روپے میں بھی فروخت ہورہا ہے۔

دوسو سے زائد برانڈ بغیر رجسٹریشن فروخت ہورہے ہیں جس کے باعث غیرقانونی سگریٹس کا مارکیٹ شئیر 40 فیصد تک پہنچ چکا ہے۔ آزاد کشمیر میں سگریٹ تیار ہو کر غیر قانونی طور پر پاکستان میں فروخت ہو رہا ہے۔

پاکستان ٹوبیکو کمپنی نے اس شعبے میں ایڈوانس ٹیکس 300 سے بڑھا کر پانچ سو روپے فی کلو کرنے کی تجویز دی ہے۔ کمپنی نے مطالبہ کیا ہے کہ حکومت سگریٹ برانڈ رجسٹریشن قانون پر عملدرآمد کرائے۔

smoking

cigarette

Tabool ads will show in this div