بھارت میں ہندو یاتریوں کی بس کو حادثہ، 26 ہلاک

بس میں 30 افراد سوار تھے، ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ

بھارت میں ہندو یاتریوں کی بس کھائی میں گرنے سے 26 افراد ہلاک ہوگئے۔ بس میں ڈرائیور سمیت 30 افراد سوار تھے۔

حادثہ بھارتی ریاست اتر کھنڈ کے ضلع اترکشی میں پیش آیا جو ریاستی دارالحکومت دیہرادون سے 160 کلومیٹر کی مسافت پر ہے۔

مقامی پولیس کے مطابق زخمیوں کو قریبی ہسپتال منتقل کیا گیا ہے, ریسکیو اہلکار مزید افراد کی تلاش میں مصروف ہیں، مرنے والوں کی تعداد میں اضافے کا خدشہ ہے۔

حادثہ کا شکار ہونے والے افراد ہمالیہ کے علاقے یموتری جارہے تھے جہاں ہندوؤں کا ایک مقدس مقام موجود ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق بس میں مدھیہ پردیش کے ضلع پنہ سے 28 افراد سوار ہوئے تھے۔

بھارتی وزیر اعظم نریندرمودی نے حادثے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے مرنے والوں کیلئے فی کس 2 لاکھ اور زخمیوں کو 50،50 ہزار روپے امدداد دینے کا اعلان کیا ہے۔

واضح رہے کہ اتر کھنڈ میں ہندوؤں کے کئی مقدس مقامات موجود ہیں جہاں ہر سال لاکھوں ہندو یاتری آتے ہیں لیکن ہمالیہ کے بلند و بالا پہاڑوں کے درمیان خطرناک سڑکوں کی وجہ سے یہاں اکثر حادثات رونما ہوتے رہتے ہیں۔

انڈیا

BUS ACCIDENT

Hindu pilgrims

Tabool ads will show in this div