فوج سے ٹکراؤ مناسب نہیں، مذاکرات ہوتے رہنے چاہئیں، شیخ رشید

شہباز شریف کو سامراج نے اقتدار پر بٹھایا، سربراہ عوامی مسلم لیگ

شیخ رشید کا کہنا ہے کہ اسلام آباد میں تاریخی ظلم کیا گیا، شہباز شریف کو سامراج نے اقتدار پر بٹھایا، فوج سے ٹکراؤ مناسب نہیں، فوج کے ساتھ ہر وقت ڈائیلاگ ہونے چاہئیں۔

سماء کے پروگرام ندیم ملک لائیو میں گفتگو کرتے ہوئے عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد نے کہا کہ اسلام آباد میں تاریخ میں پہلی بار ظلم کی انتہاء ہوئی، پہلی بار میری بہنوں کے گھروں پر چھاپے مارے گئے، شہباز شریف کو سامراج نے اقتدار پر بٹھایا ہے۔

عمران خان کے متنازع بیان سے متعلق سوال پر انہوں نے کہا کہ فوج سے ٹکراؤ مناسب نہیں، بہت بری بات ہے، میں فوج کیساتھ ہوں، اداروں سے ٹکراؤں نہیں ہونا چاہئے، فوج کیساتھ ہر وقت ڈائیلاگ ہونے چاہئیں، اور فوج کو بھی ڈائیلاگ کرنے چاہئیں، مجھے عمران خان یا فوج نے کردار ادا کرنے کا نہیں کہا، میرے فوج کیساتھ رابطے تھے اور رہیں گے۔

عمران خان کے متنازع بیان سے متعلق سوال پر انہوں نے کہا کہ فوج سے ٹکراؤ مناسب نہیں، بہت بری بات ہے، میں فوج کیساتھ ہوں، اداروں سے ٹکراؤں نہیں ہونا چاہئے، فوج کیساتھ ہر وقت ڈائیلاگ ہونے چاہئیں، اور فوج کو بھی ڈائیلاگ کرنے چاہئیں، مجھے عمران خان یا فوج نے کردار ادا کرنے کا نہیں کہا، میرے فوج کیساتھ رابطے تھے اور رہیں گے، تلخیاں نہیں ہونی چاہئیں، ہمیں اپنے تعلقات ٹھیک کرنے چاہئیں۔

قومی اسمبلی سے استعفوں کے سوال پر شیخ رشید احمد کا کہنا تھا کہ استعفیٰ لکھ کر دے دیا، پی ٹی آئی کے استعفے منظور ہوں گے تو میرا بھی ہوجائے گا، جب یہ جائیں گے میں بھی چلا جاؤں گا، عمران خان کے جلد الیکشن کے مطالبے کا حامی ہوں۔

انہوں نے مزید کہا کہ عمران خان کو ہمیشہ مہنگائی پر قابو پانے کا کہتا تھا، نئی حکومت نے گھی 230 روپے اور پیٹرول 30 روپے لیٹر بڑھ گیا، کھاد پر سبسڈی ختم کردی، جو ہم پر ملبہ تھا اب دوگنا ملبہ ان پر گر گیا، لوگ اب ہماری مہنگائی کی نہیں ان کی مہنگائی کی باتیں کررہے ہیں، لوگ ان کے چہرے بھی دیکھنا نہیں چاہتے، جس نے بھی ان کی سپورٹ کی وہ دنیا کا احمق ترین آدمی تھا۔

شیخ رشید احمد کا کہنا ہے کہ میری خواہش ہے کوئی کردار ادا کرسکتا ہوں تو کروں، جس دن بگ باس سے بات ہوئی انہیں بتاؤں گا، جب چاہوں جاسکتا ہوں مل سکتا ہوں، کوئی مسئلہ نہیں۔

سربراہ عوامی مسلم لیگ نے کہا کہ پاکستان کی تاریخ میں 25 مئی سیاہ ترین دن تھا، جون کے مہینے کو اہم دیکھ رہا ہوں، اسی سال انتخابات ہوجائیں گے، جون میں اہم فیصلے ہوجائیں گے، یہ 22 کروڑ لوگوں کا ملک ہے، لوگ اپنی بھی سوچ رکھتے ہیں، سیاسی خلفشار سے خانہ جنگی کا خدشہ ہے۔

شیخ رشید احمد نے کہا کہ رانا ثناء اللہ 22 لوگوں کا قاتل ہے، یہ جو بھی کرلیں نکلے گا کچھ بھی نہیں، انہوں نے جو اصلاحات کرنا تھیں کرلیں، آرمی چیف کی تعیناتی کا معاملہ خوش اسلوبی سے طے ہوجائیگا۔

Sheikh Rashid

IMRAN KHAN

Tabool ads will show in this div