ادارے حمزہ کو وزیراعلی برقرار رکھنے کیلیے زور لگارہے ہیں، فواد چوہدری

تمام اداروں کو صرف آئین کے مطابق فیصلے دینے چاہئیں، رہنما پی ٹی آئی

پاکستان تحریک انصاف کے رہنما فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ تمام ادارے زور لگا رہے ہیں کہ کیسے حمزہ شہباز کو وزیراعلی برقرار رکھا جائے۔

سوشل میڈیا پر اپنے وڈیو پیغام میں فواد چوہدری نے کہا کہ پاکستان کے سب سے بڑے صوبے پنجاب میں اس وقت ایک مضحکہ خیز تماشا لگا ہوا ہے، حمزہ شہباز کے پاس اس وقت پنجاب اسمبلی میں اکثریت نہیں رہی۔

رہنما پی ٹی آئی کا کہنا تھا کہ تمام ادارے زور لگا رہے ہیں کہ کیسے حمزہ شہباز کو وزیراعلی برقرار رکھا جائےایک ماہ سے زیادہ عرصہ گزر گیا پنجاب میں کوئی حکومت نہیں ہے۔

فواد چوہدری نے کہا کہ قانون یہ کہتا ہے کہ جیسے ہی مخصوصی نشستوں پر کسی سیاسی جماعت کے ارکان اسمبلی ڈی نوٹیفائی ہوں گے، فہرست میں شامل دیگر ارکان خود نخود ارکان اسمبلی منتخب ہوجائیں گے لیکن الیکشن کمیشن کئی دن گزرنے کے باوجود ان کے نوٹی فکیشن جاری نہیں کررہا۔

رہنما پی ٹی آئی کا کہنا تھا کہ لاہور ہائی کورٹ میں ایک درخواست زیر سماعت ہے کہ سرپیم کورٹ کے فیصلے کی رو سے حمزہ شہباز کا انتخاب کالعدم ہوگیا ہے لیکن ہائی کورٹ اسے معمول کے مقدمے کی طرح برت رہی ہے۔

فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ کسی ملک میں سیاسی جماعتیں آئین کے تحت چلتی ہیں، عدالتوں اور اداروں کا کام ہے کہ وہ سیاسی جماعتوں کے ساتھ آئین کے مطابق برتاؤ رکھیں، تمام اداروں کو صرف آئین کے مطابق فیصلے دینے چاہئیں۔

سابق وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ اداروں کو قطعی طور یہ کوشش نہیں کرنی چاہیے کہ اسمبلی میں مطلوبہ حمایت نہ رکھنے والے شخص کو قانونی موشگافیوں کے تحت مسلط رکھا جائے۔

اس سے قبل فواد چوہدری نے تحریک انصاف کی غلطیوں کا اعتراف کرتے ہوئے کہا کہ تحریک انصاف کی بھی غلطیاں ہیں کہ صورتحال اس نہج پر پہنچی لیکن کیا پاکستان کو اگلے 40 سال زرداری اور شریف چلائیں گے اور کیا ان سالوں کی طرح اگلی چار دھایاں بھی ضائع کر دی جائیں؟ کیا آپ یہ وراثت چھوڑ کر جانا چاہیں گے؟ لوگوں کے غصے کو کم نہ سمجھیں لوگ توقع سے زیادہ ناراض ہیں۔

PTI

IMRAN KHAN

Pakistan Latest News

Tabool ads will show in this div