عمران کا ‘پیچ اپ’ کیلئے پیغام تحریک عدم اعتماد سے پہلے کا تھا، مریم

آج پاکستان کو بیرونی نہیں، اندرونی خطرہ ہے، مریم نواز

مریم نواز شریف نے دعویٰ کیا ہے کہ عمران خان کا ‘‘پیچ اپ’’ کیلئے آصف زرداری کو پیغام تحریک عدم اعتماد سے پہلے کا تھا، خان کے دوست نے منت کی کہ پیپلزپارٹی تحریک میں حصہ نہ لے۔ ن لیگ کی نائب صدر کا کہنا ہے کہ آج پاکستان کو بیرونی خطرہ یا سیکیورٹی خدشہ نہیں بلکہ اندرونی خطرہ ہے، پاکستان کو خطرہ فساد اور فتنے سے ہے، پاکستان کا سب سے بڑے فتنے کا نام عمران خان ہے۔

مسلم لیگ ن کے بہاولپور ميں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے نائب صدر مريم نواز نے کہا کہ 50 ڈگری ميں انسان کھڑا نہيں ہوسکتا، آپ بڑی تعداد ميں جلسے ميں آئے، بہاولپور آپ سب کو يوم تکبير مبارک ہو، يوم تکبير کا مطلب ہے کہ کوئی دشمن پاکستان کو میلی آنکھ سے نہيں ديکھ سکتا، کون ہے جس نے 5 ارب ڈالر کی پيشکش ٹھکرائی، پاکستان کو ايٹمی طاقت بنايا۔ مریم نواز نے نواز شريف، افواج پاکستان، سائنسدانوں اور ذوالفقار بھٹو کو خراج تحسين پیش کیا۔

ان کا کہنا تھا کہ نواز شريف نے ايٹمی دھماکے کا فيصلہ کيا تو کس کس ملک نے دھمکی نہيں دی، کس کس نے نہيں کہا تمہيں پتھر کے زمانے ميں پہنچا ديا جائے گا، نواز شريف نے کوئی جھوٹا خط نہيں لہرايا، سازش کا ڈرامہ نہيں کيا، نواز شريف نے صرف ایٹمی دھماکے نہيں کئے بلکہ جے ايف تھنڈر کے طيارے دیئے۔

مریم نواز نے مزید کہا کہ اپنی سیاست چمکانے کی کوشش کرنیوالے فتنہ خان نے قوم کو کیا دیا، سوائے مہنگائی کے تم نے قوم کو کچھ نہیں دیا، عمران خان ایک کارنامہ بتادیں جس کی وجہ سے کسی ملک کو تمہارے خلاف سازش کی ضرورت پڑے۔

ن لیگ کی نائب صدر کا کہنا ہے کہ آج پاکستان کو بيرونی خطرہ، سیکيورٹی خدشہ نہيں اور اندرونی خدشہ ہے، پاکستان کو انتشار اور فتنے سے خطرہ ہے، ملک کا سب سے بڑا فتنہ عمران خان ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان تيزی سے ترقی کر رہا تھا، اقتدار کے لالچی کو ترقی ہضم نہيں ہورہی تھی، آج اس کا دوسرا لانگ مارچ بھی بری طرح ناکام ہوگيا، آج نمبر بدل گيا ہے تو يہ سپريم کورٹ چلا گيا، کيا عدالتوں کا يہی کام ہے کہ عمران جہاں فيل ہو اس کی مدد کو آئيں؟، تم سپريم کورٹ کے ذريعے جو انقلاب لانا چاہتے ہو اسے ناکام بناديں گے، تم سپريم کورٹ کے ذريعے جو انقلاب لانا چاہتے ہو اسے ناکام بناديں گے، سپريم کورٹ کو کہنا چاہتی ہوں اس سے دور رہيں۔

مریم نواز شریف کا کہنا ہے کہ عمران خان کہتا ہے ميرا مارچ اس لئے کامياب نہيں ہوا کہ تياری نہيں تھی، تمہاری بندے لانے کی تياری نہيں تھی، آگ لگانے کی تياری تھی، تمہاری پوليس اہلکاروں کے سينے ميں گولياں اتارنے کی تیاری تھی۔

ن لیگی رہنماء نے کہا کہ اگر لانگ مارچ کو جہاد کا نام ديتے ہو تو قاسم اور سليمان کو لندن ميں کيوں بٹھايا ہے؟، اپنے بيٹوں کو کہيں تاجِ برطانيہ کا طوق اتار کر آئیں اور مارچ ليڈ کريں، مذہب کا لبادہ اوڑھ ليتا ہے، رياست مدينہ کا نام ليتا ہے، جو اپنی سياست کيلئے مذہب کا نام استعمال کرے اس سے خطرناک کوئی نہيں۔

ان کا کہنا ہے کہ عمران خان نے آئی ايم ايف سے معاہدہ کيا تھا کہ پیٹرول کی قيمتيں بڑھائيں گے، عمران خان کی وجہ سے تيل کی قيمتيں بڑھانا پڑيں، يہ کہتا ہے آلو پياز کا ريٹ پتہ کرنے نہيں آيا، نواز شريف اور شہباز شريف آلو پياز کا ريٹ پتہ کرنے آئے ہيں، شہباز شريف نے کل تاريخ کے سب سے بڑے ريليف پيکیج کا اعلان کيا، عمران کے دور ميں آٹا 85 روپے پر چلاگيا تھا، شہباز شريف 40 روز میں واپس 40 روپے پر لے آيا۔ مریم نواز شریف نے دعویٰ کیا کہ نواز شريف اور شہباز شريف پاکستان کو بحران سے نکالنے ميں کامياب ہوجائيں گے۔

ن لیگ کی نائب صدر نے مزید کہا کہ تحریک عدم اعتماد کے دنوں میں عمران خان نے اپنے دوست کے ذريعے آصف زرداری کی منت کی کہ اس میں شامل نہ ہوں، جلسوں میں کہتے تھے کہ انہیں بندوق کی نشست پر رکھتا ہوں اور رات میں اپنے دوستوں سے منتیں کرواتے تھے۔

ان کا کہنا ہے کہ اگر سازش ہوئی تھی تو انہیں سازشیوں کی چپکے چپکے منت کیوں کیا کرتے تھے، لانگ مارچ سے دو دن پہلے نواز شریف کی منتیں کرنی شروع کردیں کہ الیکشن کی تاریخ دیدو لانگ مارچ روک دوں گا، نواز شریف کو پیغام ملا تو کہا کہ عمران خان کو کہہ دو کہ دھونس میں آئیں گے نہ ہی کسی جتھے کے آگے بلیک میل ہوں گے۔

مریم نواز شریف نے کہا کہ کہتا ہے کہ پولیس روکے گی تو انقلاب کیسے آئے گا؟، ووٹ کو عزت دو کیلئے نکلنے والوں کو بھی پولیس نے روکا تھا، نواز شریف اور مجھے بھی پولیس نے روکا تھا، پولیس اور ڈنڈوں کے ڈر سے انقلاب گھروں میں دبک کر نہیں بیٹھ جاتے۔

نائب صدر مسلم لیگ ن کا کہنا ہے کہ عمران خان نے جنوبی پنجاب صوبے کا جھوٹا وعدہ کيا، جنوبی پنجاب کی خدمت ميں کوئی کمی رہ گئی تو ہم دور کرينگے۔ انہوں نے بلیغ الرحمان کو نیا گورنر پنجاب نامزد کرتے ہوئے کہا کہ نيا گورنر پنجاب بہاولپور کا بيٹا بليغ الرحمان ہے۔

وزیراعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز کا خطاب

وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے بہاولپور میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ عمران نیازی تم نے جتنے ٹچ دینے تھے دے چکے، آج منظر عام پر آنیوالی آڈیو نے سازش کا بھانڈا پھوڑ دیا، جنہیں بُرا بھلا کہتے تھے انہی سے خود کو بچانے کی بھيک مانگ رہے تھے؟۔

ان کا کہنا ہے کہ عمران نیازی تم نے انتشار پھيلايا، يہ شخص پہلے بھی دھرنا ديکر مذاق کرچکا ہے، ميرا خدشہ تھا يہ اب بھی انتشار پھيلائے گا، يہ ايک دن نہيں رک سکا، بزدل آدمی ہے، درختوں ميں آگ لگائی، توڑ پھوڑ کی اہلکاروں کو زخمی کيا، 6 دن بعد انتشار پھيلانے کی کوشش کی تو تمہيں جيل کا ٹچ ديںگے۔

وزیراعلیٰ پنجاب نے مزید کہا کہ کہتا تھا خود کشی کرلوں گا آئی ايم ايف سے قرضے نہيں لوں گا، خود کشی نہيں کرنا ہم تمہيں سياسی خود کشی کرنے پر مجبور کریں گے، جب بيماری حد سے بڑھ جائے تو اليکٹرک شاک دينا پڑتا ہے، تمہاری انا آئين سے بڑی ہے تو اسے مٹی ميں دفن کردیں گے، تم تماشہ کرتے رہو حمزہ شہباز عوام کے دکھوں کا مداوا کرتا رہے گا۔

IMRAN KHAN

MARYAM NAWAZ

Tabool ads will show in this div