کراچی: کچرا جلانے پر مسلح تصادم، 4 افراد ہلاک، 11 زخمی

دو قبائل کے بچوں میں لڑائی، تصادم میں بدل گئی، 15 افراد گرفتار

کراچی کے علاقے ملیر میں دو گروپوں میں مسلح تصادم کے نتیجے میں 4 افراد ہلاک اور 11 زخمی ہوگئے، پولیس نے 15 افراد کو گرفتار کرکے اسلحہ بھی برآمد کرلیا۔

ایس ایس پی ملیر عرفان بہادر نے سماء ڈیجیٹل سے گفتگو میں بتایا کہ جوکھیو برادری اور حیدری فقیر برادری سے تعلق رکھنے والے بچوں میں کچرا جلانے کے تنازع کے بعد لڑائی بڑوں تک پہنچ کر مسلح تصادم میں تبدیل ہوگئی۔

پہلے فریقین میں ڈنڈے چلے جس کے بعد آزادانہ اسلحے کا استعمال کیا گیا، دو طرفہ فائرنگ میں چار افراد جاں بحق اور 11 زخمی ہوگئے۔

ایس ایس پی کے مطابق لاشوں اور زخمیوں کو جناح اسپتال منتقل کردیا گیا۔

عرفان بہادر نے بتایا کہ دونوں قبائل میں گزشتہ ڈیڑھ سال سے تنازع چل رہا ہے، جوکھیو برادری کے افراد نے الزام عائد کیا ہے کہ حیدری فقیر برادری سے تعلق رکھنے والے افراد علاقے میں جرائم پیشہ سرگرمیوں میں ملوث ہیں اور جوکھیو برادری، حیدری فقیر برادری کو جرائم پیشہ سرگرمیوں میں ملوث ہونے پر علاقہ بدر کرانا چاہتی تھی۔

واقعے کے بعد پولیس کی بھاری نفری درسانو چھنو پہنچ گئی، سرچ آپریشن کے بعد دونوں قبائل سے تعلق رکھنے والے 15 افراد کو گرفتار کرلیا، جن سے بھاری مقدار میں اسلحہ بھی برآمد کیا گیا۔

پولیس کے مطابق مقتولین میں ابن حسن ولد علی محمد، امتیاز علی ولد انور حسین، عبدالجبار ولد سچل ڈنو اور انور ولد قادر بخش شامل ہیں۔

زخمیوں میں امتیاز علی عرف بادشاہ جوکھیو، علی نواز، شاہنواز، انشاء اللہ، سیف علی، جبار اور محمد انیس (جوکھیو برادری) جبکہ جویریہ، حنیفہ، صدام اور خمیسوں کا تعلق حیدری فقیر برادری سے ہے۔

کراچی

سندھ

Tabool ads will show in this div