چین سے مالی پیکیج کی اچھی خبر ملے گی،مفتاح

توقع تو یہی ہے کہ یکم جون سے پیٹرول نہیں بڑھے گا

وزیرخزانہ مفتاح اسماعیل نے کہا ہے کہ ملک میں پیٹرول اور ڈیزل مہنگا کرنے سے مہنگائی آئے گی تاہم اگر پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں نہ بڑھاتے توملکی معیشت پر مزید دباؤ آجاتا۔ انھوں نے کہہ دیا کہ یکم جون کو پیٹرول بڑھے گا یا نہیں، مجھے علم نہیں تاہم توقع تو یہی ہے کہ یکم جون سے پیٹرول نہیں بڑھے گا۔مفتاح اسماعیل نے بتایا کہ چین سے مالی پیکیج کی اچھی خبر ملے گی۔

اسلام آباد میں وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل اور وزیر مملکت برائے خزانہ عائشہ غوث نے مشترکہ پریس کانفرنس کی۔

وزیرخزانہ نے بتایا کہ وزیراعظم پاکستان نےگزشتہ رات قوم سے خطاب کیا جس کو سراہا گیا۔

انھوں نے کہا کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں بڑھانے سے روپیہ کی قدر اور اسٹاک مارکیٹ میں بہتری آئی اور گزشتہ حکومت کی نا اہلی کےباعث مہنگائی کا طوفان آیا۔

غریب خاندانوں میں رقم دینے سے متعلق مفتاح اسماعیل کا کہنا تھا کہ وزیراعظم نے پٹرولیم سستا اسکیم کا اعلان کیا جس سے 8 کروڑ 40 لاکھ لوگ مستفید ہوں گے اوران افراد کو2 ہزار روپے آئندہ ماہ جون سے فراہم کیے جائیں گے جو ملک کے37 فیصد غریب ترین لوگوں کےلیے ہونگے۔

اس حوالے سے ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ جن کی ماہانہ آمدن 40 ہزار روپے سے کم ہے وہ میسج کریں گے تو ان کو رقم فراہم کردی جائے گی۔ 786 سے موصول میسج کی کنفرمیشن 3 دنوں میں کردی جائے گی۔

انھوں نے مزید بتایا کہ وقت آنے پر پیٹرول سستا کریں گے اور پیٹرول سستا کرنے کیلئے بھی اقدامات کررہے ہیں جبکہ موٹرسائیکل چلانے والوں کیلئے بھی اسکیم کا سوچا گیا تھا۔

انھوں نے یہ بھی کہا کہ ڈیزل کی قیمت بڑھنےسےٹرانسپورٹ کے کرائے بھی بڑھے ہیں۔ مفتاح اسماعیل نے کہا کہ ملک میں اوسط آمدن 31 ہزار روپے تک ہے اور ہر شہری اوسط 5 فیصد ٹرانسپورٹ پر خرچ کرتا ہے تاہم 40 ہزار روپے آمدن والوں کو 5 فیصد سستا تیل فراہم کیا جائے گا۔

معاشی اقدامات سے متعلق ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ بے نظیر اِنکم سپورٹ پروگرام اور وزیراعظم سستا پیٹرول اسکیم ساتھ چلے گی،ملک میں 67 لاکھ گھرانے ہیں جن کی آمدن 40 ہزارروپے سے کم ہے جبکہ 28 ارب روپے کی مجموعی طور پر سستا پٹرول اسکیم ہے اور ماہانہ کی بنیاد پر 60 ارب روپے نقصان میں کمی ہوجائے گی۔

مفتاح اسماعیل نے واضح کیا کہ حکومت کا ڈیزل کی مد میں سبسڈی ختم کرنے کا ارادہ تھا تاہم اس طرح 114 روپے سبسڈی ختم اور 30 روپے لیوی لگنے سے بڑھ جاتے اور ڈیزل کی قیمت 300 فی لیٹر اور پیٹرول کی قیمت 270 روپے فی لیٹر روپے ہوتی تاہم ہم ابھی اضافی ٹیکس نہیں لگارہے ہیں۔

وزیرخزانہ نے مبہم انداز میں کہا کہ یکم کو پیٹرول بڑھے گا یا نہیں، مجھے علم نہیں تاہم توقع تو یہی ہے کہ یکم جون سے پیٹرول نہیں بڑھے گا۔

غیرملکی امداد سے متعلق وزیرخزانہ نے بتایا کہ سعودی وزیرخزانہ نے 3 ارب ڈالر کے ڈپازٹس میں توسیع کا بیان دیا ہے،آئی ایم ایف سےبھی پاکستان کو3 ارب ڈالر ملنا باقی ہیں اور ہمارا خیال ہے کہ آئی ایم ایف سے 4 سے 5 ارب ڈالر ہو جائیں گے۔

انھوں نے یہ بھی بتایا کہ آئی ایم ایف سے پروگرام میں1 سال کی توسیع کا مطالبہ کیا ہے اور اس کے ساتھ پیکج 2 ارب ڈالر بڑھانے کا کہا ہے، آئی ایم ایف سے فنڈز ملنے سے دیگر اداروں سے بھی فنڈز ملنا شروع ہوجائیں گے۔

اس کےعلاوہ اس سال 1 ارب ڈالر ورلڈ بینک سے ملیں گے اور نومبر سے پہلے 1.5 ارب ڈالرآئیں گے اوراس ایک ہفتے کے اندر چین سے مالی پیکیج کی اچھی خبر ملے گی۔

بجٹ سے متعلق انھوں نے بتایا کہ نیا بجٹ 10 جون کو پیش کیا جائے گا، اس سال دفاعی بجٹ 1340 ارب روپے کا تھا تاہم سپلیمنٹری گرانٹس دے کر یہ 1400 ارب روپے بن جائے گا۔

imf

Miftah Ismail

Wasif Ali May 28, 2022 08:06pm
Nice
Tabool ads will show in this div