وزيراعظم کا غريبوں کيلئے ماہانہ28ارب روپے ريليف پيکج کااعلان

پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ ناگزیر تھا،وزیراعظم
May 28, 2022

LIVE | PM Shahbaz Sharif Address To The Nation | Petrol Price in Pakistan - SAMAA TV - 27 May 2022

وزیراعظم شہباز شریف نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کو معاشی دیوالیہ پن سے بچاؤ کے لیے ناگزیر قرار دیتے ہوئے 28 ارب روپے کے ریلیف پیکج کا اعلان کیا۔

قوم سے اپنے پہلے خطاب میں وزیراعظم کا کہنا تھا کہ سياسی مفاد کو قومی مفاد پر قربان کيا کیونکہ پیٹروليم مصنوعات کی قيمتوں ميں اضافہ ناگزير تھا۔

وزيراعظم کا کہنا تھا کہ ہم نے دل پر پتھرکر پٹروليم مصنوعات کی قيمتوں ميں اضافہ کيا کیونکہ دنياميں پٹرول، ڈيزل کی قيمتيں آسمان کو چھورہی ہيں، سابق حکومت نے اپنے فائدے کيلئے سبسڈی کا اعلان کيا تھا، يہ فيصلہ پاکستان کو معاشی ديواليہ سے بچانے کی جانب اہم قدم ہے۔

شہباز شریف نے کہا کہ ہم غریب عوام کو پیٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں اضافے کے بوجھ سے بچانے کیلئے 28 ارب روپے ماہانہ کے فنڈ سے پیکج کا آغاز کر رہے ہیں جس کے تحت فوری طور پر پاکستان کے ایک کروڑ 40 لاکھ غریب ترین گھرانوں کو 2 ہزار روپے ماہانہ دیے جائیں گے۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ یہ گھرانے ساڑھے 8 کروڑ افراد پر مشتمل ہیں، یہ ریلیف اس کے علاوہ ہے جو بے نظیر انکم سپورٹ کی صورت میں پہلے ہی ان خاندانوں کو دی جارہی ہے۔

شہباز شریف نے مزید کہاکہ خارجہ محاذ پر بھی مشکلات بڑھائی گئیں، دوست ممالک کو ناراض کردیا گیا،اب ہم نے دو طرفہ تعلقات کی بحالی کا آغاز کردیا گیا ہے۔

وزيراعظم کا کہنا تھا کہ ايک شخص مسلسل جھوٹ بول کر پاکستان کے سفارتی تعلقات کو نقصان پہنچارہا ہے، ہمارے سفيرنے بھی سازش کی کہانی کومسترد کرديا جبکہ قومی سلامتی کمیٹی نے2 بار کہا کوئی سازش نہيں ہوئی۔

شہبازشریف کا کہنا تھا کہ پہلی بار دروازے کھولے گئے پھلانگے نہيں گئے،یہ پارلیمان کی جیت ہے، عوام نے مطالبہ کياکہ کرپٹ حکومت سے جان چھڑائی جائے اور ہم نے مطالبے کوعملی جامہ پہنايا۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ سابق حکومت بدترين حکمرانی کے بعد تباہی چھوڑ کرگئی ہم نے پاکستان کو بچانے کا چيلنج قبول کيا، پاکستان آئين کے مطابق چلے گا،کسی ايک فرد کی ضد سے نہيں۔

انہوں نے کہا کہ نوازشريف کے دور ميں پاکستان ترقی کررہا تھا اور عمران خان نے اُس وقت بھی دھرنے کاڈرامہ رچايا جب چينی صدرسی پيک کامعاہدے کرنے پاکستان آرہے تھے جس سے معاہدہ تاخیر کا شکار ہوا۔

وزیراعظم نے عمران خان کی حکومت پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ آئی ایم ایف سے معاہدہ آپ نے کیا ہم نے نہیں، عوام کو مہنگائی کی چکی میں آپ نے پیسا ، ملک کو تاریخ کے بدترین قرض کے نیچے دفن کردیا۔

شہبازشریف نے کہا کہ ہم نے حکومت نے سنبھالی تو مہنگائی عروج پر تھی، ڈالر 2018 میں 115 پر چھوڑ کرکے گئے تھے، سابق حکومت کے پونے چارسال میں ڈالر189 تک پہنچ گیا۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ ملک میں لوڈ شیڈنگ کے اندھیرے آپ کے دور میں ہوئے، میری خدمات عوام کے سامنے ہیں، ہمارے سامنے صرف اور صرف ایک مقصد ہے، ہم مشکل فیصلہ کرنے کو تیار ہیں، ہر وہ کام کریں گے جس سے ملکی ترقی تیزی سے ہوسکے۔

PM Nawaz Sharif

Tabool ads will show in this div