ٹک ٹاکر ڈولی کی ضمانت کی درخواست مسترد

عدالت نے انہیں پیش ہونے کا حکم جاری کر دیا ہے

اسلام آباد کی مقامی عدالت نے ٹک ٹاکر ڈولی کی ضمانت کی درخواست مسترد کردی۔

رپورٹ کے مطابق ٹک ٹاکرڈولی کی ضمانت کی درخواست پر وفاقی دارلحکومت کی مقامی عدالت نے درخواست خارج کرتے ہوئے انہیں پیش ہونے کا حکم جاری کر دیا ہے۔

اسلام آباد کی ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج عابد سجاد نے مارگلہ ہلز کے جنگل میں آتشزدگی کیس کی سماعت کی، ڈولی کی جانب سے عدالت میں عبوری ضمانت میں توسیع کی استدعا کی گئی تھی تاہم وہ خود عدالت میں پیش نہیں ہوئیں۔

فاضل جج نے ملزمہ کے وکیل سے استفسار کیا کہ بتائیں ملزمہ کہاں ہیں، عدالتی اہلکار نے تین بار ملزمہ کا نام پکارا لیکن وہ پیش نہ ہوئیں۔

وکیل نے مؤقف اختیار کیا کہ ڈولی یہیں ہیں مگر جو دفعات لگائی گئی ہیں وہ اس عدالت کے دائرہ اختیار میں نہیں آتیں اس لئے کیس دوسری عدالت میں منتقل کرنے کی درخواست دائر کر رکھی ہے۔

یاد رہے کہ گزشتہ ہفتے مارگلہ کی پہاڑیوں پر آگ کے قریب ویڈیو بنانے والی خاتون ٹک ٹاکر ڈولی کے خلاف اسلام آباد کے تھانہ کوہسار میں مقدمات درج کیے گئے تھے۔

یہ مقدمہ کیپٹل ڈویلپمنٹ اتھارٹی (سی ڈی اے) کے ڈائریکٹر شعبہ ماحولیات اعجازالحسن کی مدعیت میں تھانہ کوہسار میں درج کیا گیا تھا۔

ایف آئی آر میں کہا گیا ہے کہ ٹک ٹاک پر ایک ویڈیو گردش کر رہی ہے جس میں ڈولی نام کی ٹک ٹاکر جنگل میں آگ لگا کر ویڈیو شوٹ کروا رہی ہیں۔

مبینہ طور پر یہ مارگلہ ہلز کا علاقہ ہے جہاں پچھلے کچھ دنوں سے آتشزدگی کے متعدد واقعات پیش آچکے ہیں۔

ایف آئی آر میں ٹک ٹاکر ڈولی کے خلاف لینڈ سکیپ ایکٹ 1966، وائلڈ لائف ایکٹ 1927، انوائرنمنٹ پروٹیکشن ایکٹ 1997 اور تعزیرات پاکستان کے تحت کارروائی کی استدعا کی گئی ہے۔

dolly

TIKTOK

Tabool ads will show in this div