سرکاری اسکیم کے تحت حج کرنیوالوں کیلئے خوشخبری

رواں سال سرکاری حج 6لاکھ 50ہزار سے کم کا ہوگا، وفاقی وزیر

پاکستان میں سرکاری اسکیم کے تحت حج کا ارادہ رکھنے والوں کیلئے انتہائی اہم خبر آئی ہے، وفاقی وزیر مذہبی امور مفتی عبدالشکور نے بتایا ہے کہ رواں سال سرکاری حج پر ساڑھے 6 لاکھ روپے سے کم اخراجات آئیں گے۔

قومی اسمبلی سے جمعہ کو اپنے خطاب میں وفاقی وزیر مذہبی امور مفتی عبدالشکور نے کہا کہ گزشتہ حکومت نے سعودی کمپنیوں سے ریال کرنسی میں جن ریٹس پر بکنگ کی تھی، اس کے تحت حج کا ریٹ اس سال 11 لاکھ کا ہونا تھا مگر حکومت نے سعودی کمپنیوں سے بہتر ڈیل کرکے ہوٹلز آدھی قیمتوں پر بک کئے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ مکہ میں جن رہائشی عمارتوں کو گزشتہ حکومت کے دور میں 2600 سے 3500 ریال فی حاجی بک کیا گیا تھا اب انہیں 2100 ریال میں بک کیا گیا ہے، اسی طرح مدینہ میں بھی 2100 ریال فی ہفتہ والے کمرے 720 ریال پر حاجیوں کیلئے بک کئے گئے ہیں۔

وفاقی وزی مذہبی امور نے بتایا کہ خوراک اور طعام کے اخراجات بھی کم کئے گئے ہیں کیونکہ موجودہ حکومت چاہتی ہے کہ زیادہ سے زیادہ افراد کو حج کا موقع مل سکے۔ مفتی عبدالشکور کا کہنا ہے کہ رواں سال سرکاری اسکیم کے تحت حج کرنیوالوں کے اخراجات سارھے 6 لاکھ روپے فی کس سے کم ہوں گے۔

چند روز قبل وزارت مذہبی امور کی جانب سے سرکاری اسکیم کے تحت حاجیوں کے فی کس اخراجات 8 لاکھ 50 ہزار تجویز کئے گئے تھے۔

گزشتہ ماہ وفاقی وزیر مذہبی امور نے اسلام آباد میں حج پالیسی کا اعلان کرتے ہوئے کہا تھا کہ حج اخراجات 7 سے 10 لاکھ روپے تک ہوسکتے ہیں۔

مفتی عبدالشکور کا کہنا تھا کہ روایتی طور پر ہر سال حج کے اختتام کے ساتھ ہی آئندہ حج کی تیاریوں کا آغاز ہوجاتا تھا، اس طرح 7 سے 8 ماہ کا وقت مل جاتا تھا تاہم اس بار کرونا کی وجہ سے کافی تاخیر ہوئی ہے، جس کی وجہ سے حج سے متعلق تیاریوں کیلئے وقت کم ہے۔

پاکستان

Saudi Arabia

HAJJ2022

Tabool ads will show in this div