اسلام آباد کی خوبصورتی احتجاج کی آگ میں جل کر خاکستر

پی ٹی آئی کا احتجاج تباہی و بربادی کے نشان چھوڑ گیا

اسلام آباد کو درختوں اور ہریالی کی بدولت دنیا کے خوبصورت دارالحکومتوں میں شمار کیا جاتا ہے مگر تحریک انصاف کے مظاہرین نے گزشتہ روز اسی خوبصورتی کو نشانہ بنائے رکھا۔

دنیا کے خوبصورت ترین دارالحکومت کی خوبصورتی کا راز جس سبزے اور درختوں میں چھپا تھا وہ سب پی ٹی آئی کے احتجاج کی آگ میں جل کر خاکستر ہوگئے۔

پام ٹریز جنہیں جوان ہونے میں کئی سال لگ جاتے ہیں بلین ٹری سونامی کا کریڈٹ لینے والے لیڈر کے حامیوں نے انہیں ایک پل میں جلا ڈالا۔

آگ لگانے والوں نے پی ٹی سی ایل کی تاریں جلا کر کئی سیکٹرز سے فون اور انٹرنیٹ کی سہولت بھی چھین لی۔ ڈی چوک جس کی خوبصورتی لوگوں کو اپنا گرویدہ بناتی تھی مگر اب وہاں ہر طرف گندگی یا پھر جلے اور مسلے ہوئے ننھے پھولوں کی لاشیں ہیں۔

ڈی چوک پرپی ٹی آئی کا احتجاج تو ختم ہوگیا لیکن اپنے پیچھے تباہی اور بربادی کے ایسے ہی ان گنت نشان چھوڑ گیا۔

دوسری جانب اسلام آباد پولیس نے تھانہ کوہسار میں جلاؤ گھیراؤ میں ملوث 150 افراد کیخلاف 2 مقدمات درج کرلیے۔

ایف آئی آر کے مطابق مارچ کے شرکاء کی جانب سے جناح ایونیو پر میٹرو اسٹشن کو آگ لگائی گئی جبکہ ایکسپریس چوک پر سرکاری گاڑی کو نقصان پہنایا گیا۔

Long march

PTI

islamabad police

Tabool ads will show in this div