عمران خان کو آنے دیں، دیکھتے ہیں کتنا دم ہے، مریم نواز

مسلم لیگ ن دھونس دھاندلی میں آکر حکومت نہیں چھوڑے گی، نائب صدر ن لیگ

Maryam Nawaz Important Press Conference against PTI long March - SAMAATV

مریم نواز شریف نے عمران خان کو کڑی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ انقلاب لانے کیلئے پہلے اپنے بچوں کو پاکستان لائیں، ن لیگ کی نائب صدر نے پریس کانفرنس سے اے آر وائی نیوز کا مائیک ہٹوادیا، بولیں کہ یہ میڈیا ہاؤس ملک میں انتشار پھیلانے کیلئے عمران خان کا ساتھ دے رہا ہے۔

لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے مریم نواز شریف نے اے آر وائی نیوز کا مائیک ہٹوادیا۔ ان کا کہنا ہے کہ ایک ایسا چینل جو ایجنڈے پر ہے، اداروں کیخلاف ایک بیانیہ بنا رہا، ملک میں انتشار پھیلانے کیلئے عمران خان کا ساتھ دے رہا ہے، کیونکہ اس نے 40 ارب روپے کھائے ہیں اور وہ اپنے پیسے کو بچا رہا ہے، اس کے ساتھ بات کرنے کو تیار نہیں ہوں۔

مریم نے کہا کہ لاہور واقعے سے عمران خان کا مکروہ چہرہ قوم کے سامنے آگیا بلکہ لانگ مارچ کے مقاصد میں بھی شک و شبہے کی کوئی گنجائش نہیں رہ گئی، قانون نافذ کرنے والے ادارے کے اہلکار کے سینے پر گولی چلا کر انہوں نے بتادیا کہ ان کے ارادے کیا ہیں۔

ان کا کہنا ہے کہ حکومت عوام کو پریشانی سے بچانے کیلئے جو بھی پیشگی اقدامات کررہی ہے، وہ حکومت کی ذمہ داری ہے۔

مزید جانیے: تحریک انصاف کو لانگ مارچ کی اجازت نہ دینے کا اعلان

ن لیگ کی نائب صدر نے دعویٰ کیا کہ حکومت کے پاس اطلاعات ہیں کہ ان کے پاس آنسو گیس کے شیل اور اسلحہ بھی جمع کر رکھا ہے، ان کی پوری کوشش ہے کہ قانون نافذ کرنیوالے اداروں کو ماریں، خون و انتشار کا کھیل کھیلیں۔

مریم نواز شریف نے مزید کہا کہ جب عمران خان سے کرسی چھن گئی تو انہیں صدمہ پہنچا، انہوں نے سازش کا ڈھنڈورا پیٹنا شروع کیا، اب کہتے ہیں کہ قتل کی سازش ہورہی ہے، اب انہوں نے لانگ مارچ کے ذریعے ملک میں خون و آگ کا کھیل کھیلنا چاہتے ہیں تاکہ یہ ثابت کرسکیں کہ ملک میں حالات بہتر خراب ہیں، یہ ملک سری لنکا نہیں بنے گا، آپ کی کوشش کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔

ان کا کہنا ہے کہ سب سے پہلے انقلاب اور تحريک گھر سے شروع ہوتی ہے، عمران خان اپنے بچوں کو کہو آکر ليڈ کريں، برطانيہ کا پاسپورٹ رکھا ہوا ہے، عمران خان نے نيب ميں مجھ پر پتھراؤ کروايا، پيچھے نہيں ہٹی، تمہارے بچے لندن ميں ٹھنڈی فضاؤں ميں ہیں، قوم کے بچے لو کے تھپيڑے کيوں کھائيں؟، عوام کو بے وقوف بنانے کيلئے آپ نے بيانيہ رکھا ہوا ہے۔

یہ بھی پڑھیے: ملک تباہی کی طرف جاتا ہے تو نیوٹرل بھی ذمہ دار ہوں گے، عمران خان

مریم نواز شریف نے پی ٹی آئی چیئرمین پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ امریکی چینل کو انٹرویو میں کسی سازش کا ذکر نہیں کیا، کون سی آزادی کی بات کرتے ہیں، کيا آپ نے فرح گوگی کا نام آزادی رکھا ہوا ہے؟، کرسی کھسکی تو کہا نيوٹرل جانور ہوتا ہے، کل کہا فوج نيوٹرل رہے، چيف اليکشن کمشنر آپ نے خود لگايا تھا آج کہہ رہے ہيں چيف اليکشن کمشنر غلام بنا ہوا ہے، 12 بجے عدالت کھلی آپ کو آئين شکنی سے روکا گيا، آپ نے سوشل ميڈيا پر عدالت کيخلاف مہم چلائی۔

ان کا کہنا ہے کہ عدالت کو کہنا چاہتی ہوں، ملک کے مستقبل کے حق ميں فيصلے کريں، يہ کہتا ہے مير جعفر اور مير صادق کے چہرے پہچان لئے ہیں، عمران خان کا لانگ مارچ اور دھمکیاں ہمارے لئے نہیں اسٹیبلشمنٹ کیخلاف ہے، عمران خان کو کہنا چاہتی ہوں حمزہ شہباز ہی وزيراعلیٰ ہے، شہباز شريف وزيراعظم ہيں اور وہی رہيں گے، اب تمہارے حکم کے مطابق فيصلے نہيں ہوں گے۔

ن لیگ کی نائب صدر نے کہا کہ يہ لوگ کھلے عام خونی احتجاج کی بات کر رہے ہيں، جو اہلکار شہيد ہوا اس کا ذمہ دار عمران خان ہے، يہ ملک ميں فساد کرنا چاہتے ہيں ہم نہيں ہونے ديں گے، وزیراعظم اور وزیر داخلہ کو کہا ہے عمران خان کو گرفتار نہ کریں، انہیں آنے دیں، دیکھتے ہیں کتنا دم ہے، عمران خان تمہیں پوری قوت سے روکیں گے۔

ان کا کہنا ہے کہ فی الحال الیکشن نہیں ہونے جارہے، پاکستان کے استحکام کیلئے ضروری ہے کہ حکومت مدت پوری کرے، ہم کام میں لگے رہیں گے، معیشت بحال کریں گے۔

ان کا کہنا ہے کہ مسلم لیگ ن دھونس دھاندلی میں آکر حکومت نہیں چھوڑے گی، فی الحال الیکشن نہیں ہونے جارہے، پاکستان کے استحکام کیلئے ضروری ہے کہ حکومت مدت پوری کرے، ہم کام میں لگے رہیں گے، معیشت بحال کریں گے، ملک کو فتنے بازوں کے ہاتھوں یرغمال نہیں بننے دینگے، حکومت کسی کو اداروں پر دباؤ ڈالنے کی اجازت نہیں دیگی۔

مسلم لیگ ن کی نائب صدر نے مزید کہا کہ اداروں کو پیغام دينا چاہتی ہوں يہ فتنہ ہے، جو شخص عدليہ، فوج کو گالی دے گا، کيا ان کو انصاف ملے گا، حکومت اداروں کی تذليل کی اجازت نہيں دیگی۔ مریم نواز نے سابق چیف جسٹس سے متعلق کہا کہ ثاقب نثار عبرت کا نشان ہے۔

ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ عمران خان ايک دن خود بولے گا وہ بھی استعمال ہوا ہے، اگر انتشار کا ايجنڈا ہے تو سوچ لينا وزير داخلہ کا نام رانا ثناء اللہ ہے۔

مریم نواز نے کہا کہ گورنر پنجاب کو گورنر ہاؤس میں گھس کر گرفتار کرنا چاہئے، اگر گورنر آئين و قانون کو روندتا ہے تو اس کو گرفتار کيا جانا چاہئے، انتشار کے کھيل کو روکنا شہباز شریف کی ذمہ داری ہے، شہباز شريف پوری قوت سے اس فتنے کو روکيں گے۔

پاکستان

IMRAN KHAN

MARYAM NAWAZ SHARIF

Tabool ads will show in this div