منکی پوکس کا پھیلاؤ روکنے کیلئے قومی ادارہ برائے صحت کا الرٹ جاری

تمام داخلی راستوں بشمول ایئرپورٹس پر مسافروں کی نگرانی کرنے کی ہدایت جاری

قومی ادارہ برائے صحت اسلام آباد نے منکی پوکس کے حوالے سے الرٹ جاری کردیا ہے۔

وفاقی اور صوبائی صحت حکام نے منکی پوکس کے مشتبہ کیسز کے حوالے سے ہائی الرٹ جاری کردیا ہے۔

ملک کے تمام داخلی راستوں بشمول ایئرپورٹس پر مسافروں کی نگرانی کرنے کی ہدایت جاری کردی گئی ہے۔

ملک بھر کے بڑے سرکاری اور پرائیویٹ اسپتالوں کو بھی آئسولیشن وارڈ قائم کرنے کے لئے تیار رہنے کی ہدایت کی گئی ہے۔

قومی ادارہ برائے صحت کے ماہرین نے خبردار کیا ہے کہ اس وقت دنیا میں منکی پوکس کے 92 تصدیق شدہ اور 28 مشتبہ کیسز رپورٹ ہوچکے ہیں۔

یہ بھی بتایا گیا کہ منکی پوکس وائرس جانوروں سے جانوروں اور اب انسانوں میں منتقل ہوگیا ہے، منکی پوکس وائرس متاثرہ شخص کو ہاتھ لگانے اور رطوبت لگنے سے لگتا ہے۔

ماہرین نے اسپتالوں میں موجود طبی عملے کو منکی پوکس کے مشتبہ مریضوں سے احتیاط سے پیش آنے کا مشورہ دیا ہے۔

دوسری جانب وزارت صحت کے ترجمان نے کہا ہے کہ دنیا کے چند ترقی یافتہ مملک مثلا برطانیہ، اسپین اور کینیڈا میں منکی پاکس کے کیسز کی تشخیص کے پیش نظر الرٹ جاری کیا گیا ہے تاہم ابھی تک پاکستان میں منکی پاکس کا کوئی کیس رپورٹ نہیں ہوا۔

ترجمان وزارت صحت نے سینٹر آف ڈیزیز کنٹرول قومی ادارہ صحت کو صورت حال پر نظر رکھنے کی ہدایت کی گئی ہے کہ کسی بھی مشتبہ کیس کے لیے ہائی الرٹ رہیں۔

وزارت خارجہ کے ترجمان نے مزید کہا ہے کہ کسی بھی وباء کو کنٹرول کرنے کیلئے اییر پورٹ پر اسکریننگ کا مربوط نظام موجود ہے۔ تمام ایئرپورٹس پر وزارت صحت کے ماتحت سینٹرل ہیلتھ اسٹیبلشمنٹ کا عملے کو بھی الرٹ کر دیا ہے۔

MONKEY POX

Tabool ads will show in this div