پنجاب اسمبلی کا اجلاس ملتوی؛ اسپیکر کیخلاف تحریک عدم اعتماد غیر موثر قرار

چیئرمین آف پینل نے اجلاس 6 جون تک ملتوی کردیا

**پنجاب اسمبلی میں اسپیکر پرویز الہیٰ کے خلاف تحریک عدم اعتماد غیر موثر قرار دیتے ہوئے اجلاس ملتوی کردیا گیا **

پنجاب اسمبلی کا اجلاس چیئرمین آف پینل وسیم خان بادوزئی کی سربراہی میں شروع ہوا۔ چیئرمین آف پینل نے حکومتی ارکان کی عدم موجودگی میں ہی اسپیکر کے خلاف تحریک عدم اعتماد پر کارروائی شروع کر دی۔

چیئرمین آف پینل نے اسپیکر کے خلاف تحریک عدم اعتماد کے محرک سمیع اللّٰہ خان کا نام بار بار پکارا، ان کی غیر موجودگی پر تحریک عدم اعتماد غیر موثر قرار دے دی گئی۔

پنجاب اسمبلی میں کارروائی صرف 13 منٹ ہی چلی اور تحریک عدم اعتماد غیر موثر قرار دینے کے بعد اجلاس 6 جون تک کے لیے ملتوی کردیا گیا۔

اجلاس کا ایجنڈا پنجاب اسمبلی کا اجلاس پہلے 30 مئی کو ہونا تھا تاہم اسپیکر نے 22 مئی کو ہی اجلاس طلب کرلیا۔ اجلاس کے ایجنڈے میں اسپیکر اور ڈپٹی اسپیکر کے خلاف تحریک عدم اعتماد ایجنڈے میں شامل تھی۔

اسمبلی کے دروازے بند ، راستوں پر رکاوٹیں

اسمبلی کے اجلاس سے قبل انتظامیہ نے پنجاب اسمبلی کے دروازے بند کر دیئے اور اسمبلی کے دروازوں کے سامنے خار دار تاریں لگا دی گئیں۔ اس کے علاوہ پولیس نے مال روڈ کے مختلف مقامات پر رکاوٹیں کھڑی کر دی تھیں۔ ارکان اسمبلی کو ایوان میں داخل ہونے سے بھی روک دیا گیا تھا۔

اجلاس شروع ہونے سے قبل اسمبلی کے دروازے کھول دیئے گھئے اور ارکان اسمبلی کو ایوان میں آنے کی ہدایت کردی گئی۔

ڈی جی پارلیمانی امورگرفتار

پنجاب اسمبلی کے اجلاس سے چند گھنٹے قبل ڈی جی پارلیمانی امور رائے ممتاز کو بھی گرفتار کرلیا گیا تھا ، اس کے علاوہ سیکرٹری اسمبلی اور سیکرٹری کوآرڈینیشن کے گھروں پر بھی چھاپے مارے گئے تھے۔

اجلاس ضرور ہوگا؛ اسپیکر کا اعلان

راستوں کی بندش اور ڈی جی پارلیمانی امور کی گرفتاری کے بعد میدیا سے بات کرتے ہوئے اسپیکر چوہدری پرویز الہیٰ نے کہا تھا کہ ہمارے تمام ممبران اجلاس میں پہنچیں گے، پنجاب اسمبلی کا اجلاس آج ضرور ہوگا۔ دیکھتے ہیں منتخب ارکان کو کون اسمبلی میں داخل ہونے سے روکتا ہے۔

HAMZA SHAHBAZ

PUNJAB ASSEMBLY

PERVAIZ ELAHI

PUNJAB POLICE

Tabool ads will show in this div