اسلام آباد مارچ 25 سے 29 مئی کے درمیان ہوگا،عمران خان

چیئرمین تحریک انصاف کا ملتان میں جلسے سے خطاب
May 20, 2022

سابق وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ حکمرانوں نے سپرپاور کے آگے گھٹنے ٹیکے اور اپنی آزادی کھوئی جس کی وجہ سے ہمیں ذلت ملی۔

ملتان میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کا کہنا تھا کہ جب تک ہم خوف کے بت کو نہیں توڑیں گے ایک عظیم قوم نہیں بن سکتے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ پیغام آیا کہ آپ کی جان کو خطرہ ہے شیشہ لگالو مگر جو لوگ ایمان لے آتے ہیں اللہ ان کا خوف دورکردیتا ہے۔

چیئرمین تحریک انصاف کا کہنا تھا کہ تکلیف ہوتی تھی ہم عظیم قوم ہیں لیکن اوپر کرپٹ حکمران ہیں ، دعا کرتا تھا اللہ جب بھی موقع دے گا قوم کی عظمت کو اٹھاؤں گا۔

سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ کسی فوجی نے بڑے تمغے نہیں لیے جو مرنے سے ڈرتا ہو، جس بیٹسمین کو تیز گیند لگنے کا ڈر ہو وہ بڑابیٹسمین نہیں بن سکتا اور جو نقصان سے ڈرتا ہو وہ بڑا بزنس مین نہیں بنا۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ کوئی انقلاب کامیاب نہیں ہوتا جب تک نوجوان،خواتین شرکت نہیں کرتے، ہمیشہ دعا کرتا تھا اللہ ایک دن میری قوم کو جگا دے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ سب نے سوچا پی ٹی آئی کی قبرکھد گئی ہے ان کو اللہ حافظ کہہ دو، پی ٹی آئی کودفن کرنے کی کوشش کی اللہ نے قوم کو بیدار کردیا، ان لوگوں نے منصوبہ کچھ اوربنایا تھا اللہ نے کچھ اور کردیا، پاکستان کی تاریخ کا سب سے بڑا انقلاب آرہاہے۔

انہوں نے کہا کہ 30 سال سے ملک لوٹنے والوں نے سازش کی، انہوں نے بلیک میل کرنے کی کوشش کی کہ ان کے کرپشن کیسزمعاف کردوں۔

چیئرمین تحریک انصاف کا کہنا تھا کہ جنوبی پنجاب سے اتنے زیادہ لوٹے نکلے، اللہ کا شکر ہے آج سارے لوٹے نااہل ہوگئے ہیں۔

سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ شہبازشریف کہتا تھا نیشنل حکومت بنے گی، ان کا خیال تھا ہر قسم کی دھاندلی کرکے یہ جیت جائیں گے ،مزید کہا کہ ملک سنبھل نہیں رہا ، ڈالر کی اُڑان جاری ہے،اسٹاک مارکیٹ کریش کرگئی، اب پتاچلا ان کا کرپشن کرنے کا تجربہ زیادہ ہے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ يہ حکومت جتنی دير چلے گی يہ خود رسوا ہوں گے، کبھی لندن بھاگتے ہیں،سزایافتہ شخص ملک کے فیصلے کررہا ہے ، جلد سے جلد اسمبلیاں تحلیل کرو،الیکشن کی تاریخ دو۔

انہوں نے کہا کہ مريم نواز نے تقرير ميں جذبے،جنون سے ميرا نام ليا، مريم خيال کرو!ايسانہ ہو تمہارا شوہر ناراض ہوجائے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ جیل میں چھوٹے چوراور اسمبلی میں بڑے چور نظرآتے تھے،جو اربوں چوری کرتا ہے اسے وزیراعظم،بیٹے کو وزیراعلیٰ بنا دیا جاتاہے، جب سزا ہونی تھی تو شہباز شریف کو پکڑ کرملک کا وزیراعظم بنا دیا۔

سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ اندازہ نہيں تھا کہ قوم ميرے ساتھ اس جدوجہد ميں کھڑی ہوجائے گی، امریکا اور ان ڈاکوؤں کی غلامی قبول نہیں، ہميں ان لوگوں کو شکست دينی ہے تاکہ ملک اوپر جائے۔

سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ امريکی افسر کی کيا جرات ہے وہ 22کروڑ پاکستانيوں کو دھمکی ديتا ہے، امريکيوں! تم ہوتے کون ہو ہميں دھمکی دينے والے، کہا روس ہميں 30 فيصد سستا تيل دے رہاتھا، امريکی کہتے ہيں روس سے تيل نہيں لے سکتے مگر بھارت امريکا کا اتحادی ہونے کے باجود روس سے تيل خريدتا ہے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ ہمارے ملک پر چيری بلاسم کو مسلط کردياگيا، ان ميں عوام کے لئے پاليسی بنانے کی جرات نہيں ہے، پيسے کے پجاری اپنی دولت کی وجہ سے امريکا کے غلام ہيں۔

انہوں نے کہا کہ امريکا نے نواز شریف اور آصف علی زرداری دور ميں 400 ڈرون حملے کئے، حکمرانوں نے ايک دفعہ ڈرون حملوں کی مذمت نہيں کی، امريکی جنگ ميں شرکت کرکے80ہزار پاکستانيوں کی قربانی دی مگر امريکيوں نے کبھی پاکستان کا شکريہ تک ادا نہيں کيا۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ اتوار کو پشاور ميں تحریک انصاف کور کميٹی کا اجلاس طلب کيا ہے جس میں 25 سے 29 مئی کے درمیان کے تاریخوں میں اسلام آباد مارچ کا فيصلہ ہوگا۔

IMRAN KHAN

Tabool ads will show in this div