ٹائی ٹینک ڈوب رہا ہے اور حکومت وائلن بجارہی ہے،حماد اظہر

رہنما تحریک انصاف کا حکومت کی معاشی پالیسی پر تبصرہ

رہنما تحریک انصاف حماد اظہر کا کہنا ہے کہ حکومت کی نئی معاشی پالیسی سے معیشت کو کوئی فائندہ نہیں ہوگا۔

سماء سے خصوصی گفتگو میں حماد اظہر کا کہنا تھا کہ جن چیزوں پرپابندی لگائی گئی ان کی امپورٹ بل میں مقدارکم ہے، جن سے ہم چیزیں امپورٹ کررہے ہیں اگر انہوں نے ہماری ایکسپورٹ بند عائد کردی تو کیا ہوگا۔

حماداظہر کا کہنا تھا کہ امپورٹڈ آئٹمز پر پابندی سے اسمگلنگ ميں اضافہ ہوگا، حکومتی فیصلے سے مارکیٹ میں افراتفری ہوگی اور ڈالر ہنڈی کے ذریعے باہر جائیں گے۔

رہنما تحریک انصاف نے پالیسی سے 6ارب ڈالر کی بچت کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ مذکورہ اشیاء امورٹ بل کا ڈیڑھ فیصد بھی نہیں بنتا ہماری زیادہ ایکسپورٹ پیٹرولیم مصنوعات، مشینری اور ادویات ہیں۔

سابق وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ یہ مصنوعی اقدامات ہیں، ڈالر کی قدر میں اضافے کی وجہ مارکیٹ میں غیریقینی کی صورتحال اور بے سمتی ہے، جب تک اس پر غور نہیں ہوگا صورتحال بہتر نہیں ہوگی۔

حماد اظہر کا کہنا تھا کہ اس وقت مارکیٹ میں سب سے بڑا ابہام یہ ہے کہ آئی ایم ایف سے معاہدہ ہورہا ہے یا نہیں ، حکومت پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں بڑھا رہی ہے یا نہیں۔

انہوں نے کہا کہ فیصلہ سازی ہو نہیں رہی، لوگوں کو یہ پتہ نہیں کہ معیشت مفتاح اسماعیل چلا رہا ہے یا لندن سے اسحق ڈار معاملات دیکھ رہے ہیں۔

حماد اظہر کا کہنا تھا کہ اس قسم کے پروپوزل ہمارے پاس بھی آتے تھے مگر اس کا کوئی خاص فائدہ نہیں ہے، ٹائی ٹینک ڈوب رہا ہے اور حکومت وائلن بجارہی ہے، اس سے معیشت پر کوئی فرق نہیں پڑے گا۔

PTI

hammad azhar

Tabool ads will show in this div