بلوچستان: جنگلات میں لگی آگ پھیلنے لگے، 3 افراد جھلس کر جاں بحق

واقعے میں 3 افراد زخمی بھی ہوئے، امدادی کارروائیاں جاری

بلوچستان کے ضلع شیرانی کے جنگلات میں ایک اور مقام پر آگ بھڑک اٹھی، ایک ہفتے کے دوران جنگلات میں آگ لگنے کا یہ تیسرا واقعہ ہے، 7 افراد آگ میں پھنس گئے، 3 افراد جاں بحق اور 3 زخمی ہوگئے۔

ڈویژنل فاریسٹ افسر عتیق کاکڑ کے مطابق بلوچستان کے ضلع شیرانی کے جنگلات میں ایک اور مقام پر آگ بھڑک اٹھی ہے، شرغلگئی کے علاقے میں لگنے والی آگ زیادہ شدید اورخطرناک ہے، آگ پر قابو پانے کیلئے پی ڈی ایم اے، محکمہ جنگلات اور ضلعی انتظامیہ کی ٹیمیں جائے وقوعہ پر پہنچ گئی ہیں۔

ان کا کہنا ہے کہ ہیلی کاپٹر بہت بلندی سے پانی کا اسپرے کررہا ہے جس سے آگ بجھانے میں کوئی مدد نہیں مل رہی، ایک ہفتے کے دوران ضلع شیرانی کے جنگلات میں آگ لگنے کا یہ تیسرا واقعہ ہے۔

عتیق کاکڑ نے بتایا کہ ضلع شیرانی کے جنگلات میں لگی آگ پر تاحال قابو نہیں پایا جاسکا، لیویز، محمکہ جنگلات اور علاقہ مکین آگ پر قابو پانے کی کوششیں کررہے ہیں، اگ بجھانے کی کوششوں میں مصروف 7افراد خود آگ میں پھنس گئے، جن میں سے 3 افراد جاں بحق اور 3 زخمی ہوگئے۔

سرکاری حکام کا کہنا ہے کہ وزیراعلیٰ بلوچستان میر عبدالقدوس بزنجو کی خصوصی ہدایت پر شیرانی کے جنگلات لگی آگ پر قابو پانے کیلئے کوششیں تیز کردی گئی ہیں، این ڈی ایم اے کی جانب سے آگ بجھانے کیلئے ہیلی کاپٹر کا بھی استعمال کیا جارہا ہے، چیف سیکریٹری بلوچستان نے بھی متعلقہ اداروں کو فوری طور اقدامات کرنے اور تفصیلی رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کی ہے۔

حکام کے مطابق محکمہ جنگلات، پی ڈی ایم اے اور ضلعی انتظامیہ کے متعلقہ محکمے آگ پر قابو پانے کیلئے کارروائی میں مصروف عمل ہیں، آگ پر قابو پانے کی مؤثر سرگرمیوں اور اقدامات کیلئے تمام دستیاب وسائل استعمال کئے جارہے ہیں۔

واضح رہے ضلع شیرانی میں آسمانی بجلی گرنے سے 8 روز قبل جنگلات میں آگ بھڑک اٹھی تھی۔ حکام کا کہنا ہے کہ جنگلات کے دیگر علاقوں میں آگ لگنے سے متعلق تخریب کاری سمیت دیگر وجوہات کا بھی جائزہ لیا جارہا ہے۔

بلوچستان

Forest Fire

Tabool ads will show in this div