توہین عدالت کا قانون آسمان سے نہیں اترا،چیف جسٹس لاہورہائی کورٹ

Nov 30, -0001

اسٹاف رپورٹ
لاہور : چيف جسٹس لاہور ہائيکورٹ شيخ عظمت سعيد نے کہا ہے کہ فيصلے اوپن ہونے چاہيں، چھپے چھپائے فيصلے اچھے نہيں ہوتے عوام کو معلومات کا حق ہے۔

چيف جسٹس لاہور ہائيکورٹ  شيخ عظمت سعيد نےجوڈيشل اکيڈمی ميں کورٹ رپورٹنگ  اور ميڈيا کے اخلاقيات کے موضوع پر منعقدہ سيمينار سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان کے عوام کا تنخواہ دار ملازم ہوں اوريہ عوام کو حق ہے، کہ انہيں پتہ ہو کہ فيصلے کيسے ہو رہےہيں۔

انہوں نے کہا کہ فيصلے اوپن ہونے چاہيں، چھپے چھپائے فيصلے اچھے نہيں ہوتے۔ انکا کہنا تھا کہ ہم نے بند دروازوں کے فيصلے بھی ديکھے ہيں، جس کے بعد صحاقيوں کو کوڑے مارے گئے۔

چيف جسٹس لاہور ہائيکورٹ کا کہنا تھا کہ توہين عدالت کا قانون آسمان سے نہيں اترا۔ توہين عدالت کے قانون کا مقصد انصاف ميں رکاوٹ کو روکنا ہے انکا کہنا تھا کہ معلومات کی رسائی کو کنٹرول نہيں کيا جا سکتا۔ سماء

کا

سے

law

doping