قاتل ادویات کا ریک ایکشن،مزید تین افراد چل بسے

اسٹاف رپورٹ
لاہور : قاتل دوا نے مزید تین افراد کو شکار کرليا۔ جاں بحق افراد کی مجموعی تعداد ايک سو چھتيس ہوگئی ہے۔ ینگ ڈاکٹرز نے پی آئی سی کے ایم ایس آفس پر قبضہ کرکے نئے ایم ایس کو چارج لینے سے روک دیا۔

غیرمعیاری ادویات کا زہر مریضوں میں مسلسل موت بانٹ رہا ہے  اور لواحقین اپنے پیاروں کی ہلاکتوں پر بے حال ہیں۔ حکومتی  تحقیقات سے اب تک ذمہ داروں کا تو کوئی تعین نہیں ہوا۔  البتہ مختلف کمیٹیوں کی تفتیش جاری ہے۔ لوگوں کا کہنا ہے کہ حکومتی عہدیدار ذمہ داریاں پوری کرتے توکئی قیمتی جانیں ضائع ہونے سے بچ سکتی تھیں۔

ادھر حکومت اور ینگ ڈاکٹرز کے درمیان ڈاکٹر جاوید کو پی آئی سی کے نئے ایم ایس کے طور پر تعینات کرنے پر تنازع شدت اختیار کرگیا ہے اور ڈاکٹرز نے انہیں چارج لینے سے روک دیا۔ ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن کا کہنا ہے کہ وعدے کے مطابق سابق ایم ایس اور چیف ایگزیکٹو کو بحال کیا جائے۔ ادویات کے ری ایکشن سے ہلاکتوں کے بعد اگرچہ وزیراعلیٰ پنجاب  کچھ محکموں سے دستبردار ہوئے ہیں تاہم مخالفین کی جانب سے اُن پر تنیقد میں کمی نہیں آئی۔ اپوزیشن کا کہنا ہے کہ بطور وزیر صحت شہبازشریف کو مستعفی ہوجانا چاہیے۔ سماء

کا

MQM

Hayatabad

Inqilab March

arabs

director

furniture

Tabool ads will show in this div