سپریم کورٹ کا عوامی مقامات سے تمام سائن بورڈز ہٹانے کا حکم

2

[video width="640" height="360" mp4="http://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2016/05/Bill-Boards-Case-Khi-Pkg-05-05-Ayaz.mp4"][/video]

کراچی : سپریم کورٹ نے کراچی میں عوامی مقامات پر لگے سائن بورڈ ہٹانے کا حکم دے دیا، متعلقہ اداروں کو پل، گرین بیلٹ، فٹ پاتھ، دیواروں پر ہورڈنگز اور بل بورڈ لگانے کی اجازت نہ دینے کی بھی ہدایت کردی۔

سپریم کورٹ کے 3 رکنی بینچ نے شہر میں نصب ہورڈنگز اور سائن بورڈز سے متعلق کیس کا فیصلہ سنادیا، کیس کی سماعت جسٹس ثاقب نثار، جسٹس امیرہانی مسلم اور جسٹس خلجی عارف حسین نے کی۔

Bill Boards Case Khi Pkg 05-05 Ayaz

عدالت عظمیٰ نے اپنے حکم میں کہا ہے کہ کراچی میں بغیر اجازت لگائے گئے بل بورڈز 15 دن میں ہٹادیئے جائیں، مقامی اداروں کی اجازت سے لگائے گئے ہورڈنگز بھی 30 جون تک ہٹانے کی ہدایت کی گئی ہے۔

سپریم کورٹ نے اپنے فیصلے میں کہا ہے کہ متعلقہ ادارے آئندہ پُل، گرین بیلٹ، فٹ پاتھ، دیواروں پر ہورڈنگز اور بل بورڈ لگانے کی اجازت نہ دیں۔

عدالت کا کہنا ہے کہ ایڈووکیٹ جنرل سندھ اور ایڈیشنل اٹارنی جنرل کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ عوامی مقامات پر کسی بھی قسم کے ہورڈنگز اور سائن بورڈ لگانے کی اجازت نہیں، کے ایم سی، ڈی ایم سی، کنٹونمنٹ بورڈ سمیت کسی بھی ادارے کو عوامی مقامات پر ہورڈنگز لگانے کی اجازت کا کوئی قانون موجود نہیں ہے۔

عدالت نے تمام اداروں کو احکامات کی تعمیل سے متعلق رپورٹ بھی پیش کرنے کی ہدایت کی ہے۔ سماء

SupremeCourt

CANTONMENT

DMC

Tabool ads will show in this div