وزیراعظم سےاستعفےکامطالبہ جائزقرار،کپتان بھی بلاول کےہمنوا

Apr 30, 2016
Imran Khan Talk Lhr 30-04 [video width="640" height="360" mp4="http://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2016/04/Imran-Khan-Lhr-Pkg-30-04.mp4"][/video] لاہور : پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان نے بھی بلاول بھٹو نے مطالبے کی حمایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاناما لیکس تحقیقات پر وزیراعظم کے استعفے کا مطالبہ جائز ہے، جب تک نواز شریف جواب نہیں دیتے،تحریک چلتی رہے گی۔ لاہور آمد پر کپتان نے جلسے سے قبل ہی مخالفین پر باؤنسرز برسا دیئے، سیاسی اکھاڑے میں کل تک جو رقیب تھے آج وزیراعظم کی پاناما لیکس تحقیقات کیلئے رفیق بن گئے۔ گفتگو کا آغاز کرتے ہوئے پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان نے پیپلزپارٹی چیئرمین بلاول بھٹو کے مطالبے کو جائز قرار دیتے ہوئے وزیراعظم کے استعفیٰ کا پھر مطالبہ کردیا۔ عمران خان کا کہنا تھا کہ میاں صاحب سمجھ لیں ملک میں جمہوریت ہے بادشاہت نہیں، آپ نے غلط کام نہیں کیا تو قوم کے سامنے سچ بول دیں، جمہوریت میں جواب مانگنا ہمارا حق ہے، بلاول بھٹو کا وزیراعظم سے استعفے کا مطالبہ جائز ہے۔ کپتان کا کہنا تھا کہ خوشی ہے کہ آج نواز شریف کو میں بہت یاد آیا، میاں صاحب سے جواب مانگیں تو مانسہرہ روانہ ہوجاتے ہیں، مگر وزیراعظم صاحب آپ سن لیں شفاف انتخابات کے بغیر حقیقی جمہوریت نہیں آسکتی، ہم اس بار وزیراعظم کو ٹائم لائن دیں گے، نواز شریف کو اس بار جواب دینا پڑے گا۔ ٹی آر اوز سے متعلق بات کرتے ہوئے عمران خان کا کہنا تھا کہ پاناما سے متعلق ٹی آو آرز کیلئے کمیٹی تشکیل دے دی ہے، پیر کو اعتزاز احسن کے سامنے ٹی اوآر رکھیں گے، لاہور میں اتوار کا جلسہ بہت زبردست ہوگا۔ ایک سوال کے جواب میں کپتان کا کہنا تھا کہ مجھے نوازشریف کے سوا کس سے سیکیورٹی خطرہ ہوگا، جب تک نواز شریف جواب نہیں دیتے،تحریک چلتی رہے گی۔ سماء

PTI

IMRAN KHAN

LAHORE JALSA

Panama leaks

CharingCrossJalsa

Tabool ads will show in this div