پاناما لیکس پر تحقیقات تک وزیراعظم استعفیٰ دیں،بلاول

Bilawal moodi sot 30-04

کوٹلی: پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے وزیراعظم نواز شریف سے مطالبہ کیا ہے کہ جب تک پاناما لیکس کے معاملے پر تحقیقات ہوں آپ استعفیٰ دیں اور جب تحقیقات ہوجائیں تو آکر وزیراعظم کا عہدہ سنبھالیں۔ انہوں نے کہا کہ میاں صاحب نے 3 سال میں کبھی بھی کھل کر کشمیر پربات نہیں کی۔

آزاد کشمیر کے ضلع کوٹلی میں عوامی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری نے حکومتی جماعت پاکستان مسلم لیگ ن کو کڑی تنقید کا نشانہ بنایا۔ پی پی چیئرمین کا کہنا تھا کہ پاناما لیکس پر تحقیقات تک وزیراعظم نواز شریف کو مستعفی ہوجانا چاہیئے۔

بلاول بھٹو زرادری نے وزیراعظم کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ میاں صاحب آپ کے دن گنے جاچکے ہیں، آپ کی حکومت مدت پوری نہیں کرسکے گی، آج آپ کی حالت یہ ہے کہ بیمار بن کر لندن جارہے ہیں اور ایک نمائندے کو جرمنی تو دوسرے کو امریکا بھیجتے ہیں۔

مزید پڑھیں؛ وزیراعظم نےپانامالیکس کی تحقیقات کیلئےخودکوپیش کردیا

بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ دھوکے کی دیوار اب گرنے والی ہے، مسلم لیگ ن مینڈیٹ چرانے میں ماہر ہے۔ انہوں نے کہا کہ ن لیگ کے وزراء صرف جھوٹا پروپیگنڈا کرنے میں مصروف ہیں۔

بلاول بھٹو نے کہا میاں صاحب نے3سال میں کبھی بھی کھل کر کشمیر پر بات نہیں کی اور نہ ہی وزیراعظم نے کشمیریوں پر مظالم کی کبھی مذمت کی ہے۔ انہوں نے کہا کشمیر کو پوری دنیا میں جدوجہد کی علامت سمجھا جاتا ہے اور پیپلز پارٹی کشمیریوں کے حقوق کیلئے کبھی خاموش نہیں رہےگی۔

بلاول بھٹو نے وزیراعظم پر الزام لگایا کہ آپ کی فارن پالیسی میں بھی پہلے بزنس انٹرسٹ ہوتا ہے اور اسی طرح پی آئی اے میں بھی پہلے آپ کا بزنس انٹرسٹ ہوتا ہے، آپ اداروں کو ایک ہاتھ سے اونے پونے بیچتے ہو دوسرے سے خرید لیتے ہو، پھر اس پیسے سے آف شور کمپنیز بناتے ہو۔ انہوں نے کہا کہ ترقی کے نام پر آپ کا انٹرسٹ صرف میٹرو بس اور ٹرینوں میں ہے۔

بلاول نے بتایا کہ اورنج لائن ٹرین دنیا کا مہنگا ترین منصوبہ ہے اور صرف ایک منصوبے پر 162 ارب روپے خرچ کیا جارہا ہے، جبکہ پورے کشمیر کا بجٹ صرف68 ارب روپے ہے۔ انہوں نے کہا موجودہ حکومت نے 3سال میں سب سے زیادہ قرض لیا۔ سماء

PM

bilawal bhutto zardari

ORANGE LINE TRAIN

Panama leaks

Offshore Companies

Kotli Jalsa

Businessman

Tabool ads will show in this div