پرویزمشرف کے خلاف ریڈ وارنٹ جاری کئے جائیں گے، رحمان ملک

Nov 30, -0001

اسٹاف رپورٹر
کراچی: رحمان ملک کا کہنا تھا کہ بینظیربھٹونےلال مسجدآپریشن کی حمایت کی تھی۔ القاعدہ نےانہیں کراچی میں بھی نشانہ بنانے کی منصوبہ بندی کی۔
وفاقی وزیر داخلہ نے کہا کہ خودکش بمبارکہاں سےاستعمال ہوئے اس بارے میں ریکارڈ موجود ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ خودکش بمبار کے گھر مٹھائی بھیجی گئی اورمبارکباد دی گئی۔  ان کا کہنا تھا کہ وہ یہ نہیں کہتے کہ بی بی کی شہادت میں سمیع الحق ملوث ہیں، لیکن ان کے مدرسے دارلعلوم حقانیہ اکوڑہ خٹک کا پلیٹ فارم استعمال کیا گیا۔
بی بی قتل کیس کی تحقیقاتی ٹیم کے سربراہ خالدقریشی نے بریفنگ میں بتایا کہ طالبان اورمشرف بینظیربھٹوکوخطرہ سمجھتےتھے۔ وطن واپسی پر بینظیربھٹوکووی وی آئی پی سیکیورٹی نہیں دی گئی۔ بیت اللہ محسودنے حملہ آورکو4لاکھ روپےدیئےتھے۔۔ حملہ آور نے پہلے فائرنگ کی اور پھر بے نظیر بھٹو کی گاڑی سے3فٹ کےفاصلےپرخودکواڑالیا۔ خالد قریشی کا کہنا تھا کہ حملے کے بعد کرائم سین فوری طورپردھونےکاکوئی جوازنہیں تھا۔
وفاقی وزیر داخلہ رحمان ملک کا مزید کہنا تھا کہ  پرویز مشرف کے خلاف ریڈ واررنٹ جاری کئے جائیں گے اور انٹرپول کے ذریعے انہیں واپس لایا جائے گا۔  بریفنگ کے دوران خودکش بمباروں اوران کے ساتھیوں کی فوٹیج بھی دکھائی گئی ۔

کے

ملک

خلاف

جاری

eyes

crescent

Tabool ads will show in this div