تین سال میں ٹیکس وصولیوں میں26فیصد ریکارڈ اضافہ

Apr 23, 2016
Ishaq Dar New Isb 23-04 [video width="640" height="360" mp4="http://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2016/04/Ishaq-Dar-New-Isb-23-04.mp4"][/video] اسلام آباد : اسحاق ڈار کا کہنا ہے کہ حکومت 2018کے آخر تک اقتصادی ترقی کا 7فیصد ہدف حاصل کر لے گی، پچھلے تین سال کے دوران ٹیکس وصولیوں میں56 فیصد اضافہ ریکارڈ کیاگیا ہے،گردشی قرضے رواں سال جولائی تک ختم ہوجائیں گے،ملک میں توانائی کی طویل مدتی ضروریات پوری کرنے کیلئے پچیس ہزار سے چھبیس ہزار میگاواٹ بجلی کے منصوبے تکمیل کے مختلف مراحل میں ہیں۔ اسلام آباد میں پری بجٹ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر خزانہ نے کہا کہ 2013میں جب مسلم لیگ ن برسراقتدار آئی تو ملک اقتصادی دیوالیہ ہونے کے دہانے پر کھڑا تھا لیکن گزشتہ تین سال کے دوران مختلف شعبوں میں متعارف کرائی گئی اصلاحات کے باعث ملکی معیشت مثبت سمت میں گامزن ہے۔قوم آج وزیر اعظم نواز شریف کے فیصلوں کے ثمرات کو دیکھ رہی ہے۔پچھلے دو سالوں میں مہنگائی کو 8.6فیصد سے کم کر کے گزشتہ سال 4.5فیصد کی سطح پر لے آئے جبکہ اس سال مہنگائی کی شرح مزید کر کے 4فیصد تک لائی جائیگی۔توانائی کے حوالے سے اسحاق ڈار نے کہا کہ مارچ 2018تک سسٹم میں 10ہزار میگا واٹ بجلی کا اضافہ کیا جائیگا جبکہ مجموعی طعور پر 25ہزار میگا واٹ توانائی کے منصوبوں پر کام جاری ہے۔انہوں نے کہا کہ میکرو اقتصادی استحکام کے بعد حکومت نے ملک میں روز گار کے مواقعوں میں اضافے کیلئے انفراسٹرکچر،صنعت،زراعت اور دیگر شعبوں کی ترقی پر بھر پور توجہ دے رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں ترقی کی بڑی صلاحیت موجود ہے اور بہت جلد اقتصادی لحاظ سے پاکستان کا شمار دنیا کی بہترین 18معیشتوں میں ہو گا۔ماضی میں دھرنوں نے ملکی معیشت کو اربوں ڈالر کا نقصان پہنچایا،وئندہ کسی کو ملکی اقتصادی ایجنڈے کو ڈی ریل نہیں ہونے دینگے۔پانامہ لیکس کے حوالے اسحاق ڈار نے کہا کہ وزیر اعظم نواز شریف نے لندن سے واپسی پر چیف جسٹس کو خط لکھ دیا ہے۔اب یہ معاملہ سپریم جوڈیشری پر چھوڑ دینا چاہیئے۔اقتصادی اصلاحات سے ملکی کرنسی کے قدر میں اضافہ ہوا اور پہلی مرتبہ ترسیلات زر 13ارب ڈالر سے بڑھ کر18.5ارب ڈالر تک پہنچ گئے جبکہ 2018تک ترسیلات زر کا 19ارب ڈالر کا ہدف حاصل کیا جائیگا۔انہوں نے کہا کہ ہم نے کراچی کی رونقیں بحال کی ہیں اور کراچی میں زندگی معمول کے مطابق آچکی ہے۔ قبائیلی علاقوں میں دہشت گردوں کیخلاف آپریشن ضرب عضب کامیابی سے جاری ہے۔ انہوں نے کہا اس آپریشن کے نتیجے میں لاکھوں لوگ اندرون ملک بے گھر ہوگئے انکی واپسی،بحالی تعمیر نو کیلئے 1.9ارب ڈالر کی ضرورت ہے۔ملکی سیکورٹی کی صورتحال کو بہتر کیا ہے۔جس کی وجہ سے یورپی یونین سمیت کئی ممالک پاکستان میں سرمایہ کاری کرنا چاہتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ آئی ایم ایف،عالمی بنک ،ایشیائی بینک سمیت دنیا کے 22عالمی اداروں نے پاکستان معیشت میں پیشرفت کو تسلیم کیا اور سراہا ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ پچھلے تین سال کے دوران ٹیکس وصولیوں میں56 فیصد اضافہ ریکارڈ کیاگیا ہے۔انہوں نے کہا پچھلے چند برسوں کے دوران ترسیلات زر میں سترہ فیصد اضافہ ریکار ڈ کیاگیا ہے۔برآمدات میں بہتری لانے کیلئے نئے تجارتی پالیسی کا اعلان کیاگیا ہے۔ انہوں نے عزم ظاہر کیا کہ گردشی قرضے رواں سال جولائی تک ختم ہوجائیں گے۔اسحق ڈار نے کہا کہ حکومت نے اچھے نظم و نسق اور بلا امتیاز احتساب پر یقین رکھتی ہے۔انہوں نے کہاکہ بڑے پیمانے پر اقتصادی استحکام کے باعث چین نے ہمیں چھیالیس ارب ڈالر کا پیکیج دیا ہے۔وفاقی وزیر نے کہاکہ رواں مالی سال کے پہلے آٹھ ماہ میں مینو فریکچرنگ کے شعبے میں نمایاں بہتری آئی اور زرعی شعبے نے شرح نمو بڑھانے میں بھرپور کردار ادا کیا ہے۔ سماء

TAX

pakistan economy

foreign reserve

pre budget conference

Budget2016

Tabool ads will show in this div