سارا شور سی پیک منصوبہ کو روکنے کیلئے ہے،مشاہد اللہ

Mushahid Ullah Gund sot Isb 12-01 اسلام آباد : سینیٹر مشاہد اللہ خان کا کہنا ہے کہ پاناما لیکس کمیشن پر تمام سیاسی جماعتوں سے بات چیت جاری ہے، ان کا کہنا تھا کہ سارا شورشرابہ سی پیک منصوبہ کو روکنے کی عالمی سازش ہے،مگر بیس کروڑ عوام کی دعائیں وزیراعظم کے ساتھ ہیں۔ پارلیمنٹ کے باہر میڈیا سے گفت گو میں سابق وفاقی وزیر سینیٹر مشاہد اللہ خان نے کہا ہے کہ پانامہ لیکس پرکمیشن بنانے کے لئے تمام سیاسی جماعتوں سے بات چیت کی جا رہی ہے، سارا شورشرابہ سی پیک منصوبہ کے راستے میں روڑے اٹکانے کے لئے کیا جا رہا ہے یہ عالمی سازش ہے، بیس کروڑ عوام کی دعائیں وزیراعظم کے ساتھ ہیں ،جلد وطن واپس آئیں گے، دوسال قبل حکومت کو کمزور کرنے کی دھرنے کے ذریعہ سازش کی گئی جسے شکست کا سامنا کرنا پڑا اب بھی شکست سے دوچار ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ کمیشن کے مسئلے پر جلد اتفاق رائے ہو جائے گا، سیاسی نظام چلتا رہے گا، حکومت تمام سیاسی جماعتوں کو پارلیمنٹ کے اندر اور باہر برابری کی بنیاد پر کوریج دے رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ دو سال قبل دھرنے کے ذریعے حکومت کو کمزور کرنے کی کوشش کی گئی حکومت نے دھاندلی کے مسئلہ پرجوڈیشل کمیشن بنایا، کمیشن کے فیصلہ کے بعد دھرنے والوں کو شکست کا سامنا کرنا پڑا جبکہ اب بھی وہ شکست سے دوچار ہوں گے، کچھ لوگ ملک کی ترقی اور اس طرح کے منصوبوں پر خوش نہیں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم علاج کی غرض سے ملک سے باہر گئے ہیں، بیس کروڑ عوام کی دعائیں وزیراعظم کے ساتھ ہیں، وزیراعظم صحت یابی کے بعد جلد وطن واپس آئیں گے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ آئین میں قائمقام وزیراعظم کا تصور نہیں اس سے قبل بھی وزیراعظم ملک سے باہر جاتے اور آتے رہے ہیں۔ سماء

PTI

RAIWAND

mushahid ullah

Panama leaks

Tabool ads will show in this div