سینیٹ انتخابات کیلئےایک سیٹ کی قیمت ساڑھے تیرہ کروڑ روپے تک پہنچ گئی

اسٹاف رپورٹر


اسلام آباد : سینیٹ انتخابات کے لئے قواعد و ضوابط جاری کر دیئے گئے۔ فاٹا کی چار نشستوں پر گیارہ امیدوار میں میدان میں ہیںاور فتح یقینی بنانے کے لئے امیدواروں نے تجوریوں کے منہ کھول دیئے ہیں جبکہ سینیٹ ایک سیٹ کی قیمت ساڑھے تیرہ کروڑ روپے تک پہنچ گئی ہے۔


پارلیمنٹ کے ایوان بالا کی چون نشستوں پر انتخابات کل ہوں گے۔۔۔ الیکشن کمیشن کے مطابق سینیٹ الیکشن کے لیے کاغذات نامزدگی واپس لینے کی مدت ختم ہوگئی ہے۔۔۔ فاٹا سے کسی امیدوار نے کاغذات نامزدگی واپس نہیں لئے۔۔۔ فاٹا کی چار نشستوں کیلئے حمیداللہ جان آفریدی، منیرخان اورکزئی اور سینیٹر صالح شاہ سمیت گیارہ امیدوار میدان میں ہیں۔


 الیکشن کمیشن کے مطابق اب امیدوار کاغذات نامزدگی واپس لینے کی بجائے ریٹائرڈ ہو سکتے ہیں۔۔۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ شدید اختلافات کے باعث کامیابی کیلئے امیدواروں نے تجوریوں کے منہ کھول دیئے اور فاٹا کی ایک سیٹ کی بولی ساڑھے تیرہ کروڑ روپے تک پہنچ گئی ہے۔


 عبدالمالک قادری، وحید خان، نجم الحسن بولی میں آگے ہیں۔۔۔ ایم این اے جواد حسین طوری، انجنئیر شوکت اللہ اور نورالحق قادری اپنے بھائیوں کی جیت کے لیے اثرورسوخ استعمال کر رہے ہیں۔


 قواعدوضوابط کے مطابق امیدواران اور ووٹرز کے لئے کسی بھی قسم کا الیکٹرانک مواد ووٹنگ کے وقت ساتھ رکھنے پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔


اُدھر پشاور میں مسلم لیگ قاف کے تين اميدواروں نے سينیٹ اليکشن سے دستبرداری کا اعلان کر دیا ہے۔۔۔ جنرل نشست کے امیدوار محمد علی خان اور قاسم شاہ جبکہ ٹيکنوکريٹ نشست پر خان چمکنی نے انتخابات سے دستبردار ہونے کا فیصلہ کیا۔ سماء

کی

ceo

bail

champion

کروڑ

noc

Tabool ads will show in this div