سیالکوٹ: شادی سے انکار پر بااثر افراد نے تشدد کے بعد خاتون کا سر مونڈھ دیا

 اسٹاف رپورٹ
سیالکوٹ:  شہر کے علاقے سمبڑیال میں شادی سے انکار پر بااثر افراد نے تشدد کے بعد خاتون کا سر مونڈھ دیا اور توہین آمیز سلوک کرکے گاؤں سے نکال دیا ۔۔۔ پولیس نے چوبیس افراد کو گرفتار کرلیا ہے ۔۔۔ ملزمان کو آج گوجرانوالہ کی عدالت میں پیش کیا جائے گا۔۔

خواتین پر تشدد کی روک تھام کے دعوے تو بہت کیے جاتے ہیں لیکن یہ واقعات تسلسل کے ساتھ رونما ہو رہے ہیں۔۔۔ سیالکوٹ کی تحصیل سمبڑیال کے گاؤں کوٹ میرتھ کی رہائشی بدقسمت خاتون نور فاطمہ اپنے ساتھ ہونے والے ظلم پر اشکبار ہے۔۔۔

خاتون کا کہنا ہے کہ اس کے اپنے گاؤں میں پولیس اہلکار کے بااثر والد اللہ دتہ نے شادی سے انکار پر نہ صرف دیگر بااثر ساتھیوں کے ساتھ مل کر اس کے گھر پر حملہ کیا۔۔۔ بلکہ تشدد کا نشانہ بنایا۔۔۔ سر مونڈھ دیا۔۔۔ اس پر بھی غصہ ٹھنڈا نہ ہوا تو خاتون کے گلے میں جوتوں کے ہار پہنا کر گدھے پر بٹھایا اور گاؤں میں گشت کرایا اور گاؤں سے بے دخل کر دیا۔۔۔

نور فاطمہ نے گوجرانوالہ میں رشتے دار کے گھر میں پناہ لی۔۔۔ اور پولیس کو رپورٹ کی۔۔۔ جس کے بعد پولیس نے تفتیش شروع کر دی۔۔۔ واقعے میں ملوث چوبیس افراد کو گرفتار کر لیا ہے۔۔۔ حجام کو بھی تفتیش میں شامل کر لیا۔۔۔ اور مزید کارروائی کی جا رہی ہے۔۔۔ سماء

Please click ‘Video’ button to watch this news.

کے

کا

پر

MQM

سے

نے

بعد

دیا

rescue

street

Tabool ads will show in this div