سانحہ کوہستان کے خلاف مختلف شہروں میں مظاہرے

Nov 30, -0001

اسٹاف رپورٹر


اسلام آباد : سانحہ کوہستان کے خلاف مختلف شہروں میں مظاہرے کئے گئے۔ گلگت اور ہنزہ میں تیسرے روز بھی کاروباری سرگرمیاں معطل رہی۔ اسلام آباد میں مظاہرین نےملزمان کی عدم گرفتاری پر پارلیمنٹ سمیت اہم عمارتوں کا گھیراؤ کرنے کی دھمکی دی ہے۔


گلگت بلتستان کے مختلف علاقوں میں بھی مظاہروں کا سلسلہ جاری ہے۔ مختلف مذہبی اور سماجی تنظیموں کی جانب سے ریلیاں نکالی گئیں اور قاتلوں کی جلد گرفتاری کا مطالبہ کیا گیا۔۔۔ اس موقع پر شہر بھر میں کاروباری سرگرمیاں معطل رہیں۔   


اسکردو اور ہنزہ نگر کے مختلف علاقوں اسکندر آباد، تھول نگر، ساس ویلی، نگر خاص ہوپر مرتضی آباد اور علی آباد  میں بھی مظاہرے کئے گئے۔


اسلام آباد کے علاقہ جی سکس میں مظاہرین نے مختلف سڑکوں پر مارچ کیا اور سانحہ کوہستان کے ذمہ داروں کو گرفتار کرکے عبرتناک سزا دینے کا مطالبہ کیا۔


ملتان میں بھی سانحے کے خلاف مظاہرہ کیا گیا اورقاتلوں کی گرفتاری اور عبرتناک سزا دینے کا مطالبہ کیا۔


ادھرحیدرآباد میں شیعہ علماء کونسل کی جانب سے سانحہ کوہستان کے خلاف مظاہرہ کیا گیا۔ مظاہرین نے نعرے بازی کرتے ھوئے دھشتگردی کے واقعات پر شدید مذمت کی۔


نوشھرو فيروز، بدین اورکندھ کوٹ میں بھی سانحہ کوہستان کے خلاف شہریوں نےاحتجاج کیا۔ سماء

میں

کے

خلاف

famine

conflict

Tabool ads will show in this div